ایران کی مہلک ہتھیاروں کو بطور آلہ استعمال کرنے پر تنقید

نیویارک، ارنا – اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل نمائندے نے مہلک ہتھیاروں پر سلامتی کونسل کے رکن ممالک کے دوہرے انداز کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ نے مہلک ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کو بطور آلہ استعمال کو رک جانا چاہئے۔

یہ بات مجید تخت روانچی نے گزشتہ روز اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مہلک ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ سے متعلق غیر سرکاری اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے بتایا کہ بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کا عدم پھیلاؤ ایک انسان دوست مقصد ہے جسے دوسرے ممالک کے خلاف دباؤ کے آلے کے طور پر استعمال کیا گیا ہے اور اس صورتحال کو ختم ہونا ضروری ہے۔

تخت روانچی نے کہا کہ مہلک ہتھیار اب سب سے زیادہ غیر اخلاقی اور غیر انسانی ہتھیار ہیں اور ان کی پیداوار اور استعمال پر پابندی عائد کردی گئی ہے اور ان غیر انسانی ہتھیاروں کے استعمال کے خلاف واحد مکمل ضمانت ان کی مکمل تباہی ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ ایران کیمیائی ہتھیاروں کا شکار ہے اور ایک بار پھر ان ہتھیاروں کے استعمال کی کسی بھی جگہ، کسی بھی حالت میں سخت مذمت کے ساتھ ساتھ کیمیائی ہتھیاروں کی ممانعت سے متعلق کنونشن کے اختیار کی کمزوری کی سخت مخالفت کرتا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha