60 فیصد افزودگی پر امریکہ اور یورپ کی تشویش ٹھیک نہیں ہے: ایرانی صدر

تہران، ارنا – ایرانی صدر نے کہا کہ اس سے پہلے بھی ہم یورینیم کی 60فیصد افزودکی کا عمل کو آغاز کر سکتے تھے اور اب اس حوالے پر امریکہ اور یورپ کی تشویش کا اظہار ٹھیک نہیں۔

یہ بات حسن روحانی نے جمعرات کے روز پیٹروکیمیکل کی صنعت کے قومی منصوبوں کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے باقی 10دنوںمیں کورونا اور پابندیوں کے خاتمے کو 12ویں حکومت کےدو اہم سرکاری پروگرام قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے پہلے ہمارے پاس یورینیم کی 60 فیصد افزودگی کی صلاحیت تھی ہوسکتی تھی اور اس حوالے سے امریکہ اور یورپ کے لیے تشویش کی کوئی جگہ نہیں ہے۔

روحانی نے کہا کہ اب ویانا میں ہمارے سفارت کار کوشش کر رہے ہیں۔ ہمارے لئے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے کہ دشمن عقل کی طرف لوٹتا ہے یا قانوں کی پیروی کرتا ہے لیکن ہمیں یقین ہے کہ امریکہ اور دوسرے ممالک جو جوہری معاہدے کے ممبر ہیں، کے لئے کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے اور ان کے لیے واحد راستہ قرارداد 2231 اور جوہری معاہدے پر مکمل عمل درآمد کرنا ہے اور اگر وہ ایسا کریں تو ہم دیانتداری کی توثیق کے فورا بعد اپنے تمام حتمی وعدوں پر واپس آجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے ہم 60 فیصد افزودگی کر سکتے تھے اگر آج ہی ہم چاہیں تو ہم 90 فیصد افزودگی کرسکتے ہیں لیکن ہم نے وعدہ کیا ہے اور ایٹمی بم کی تلاش نہیں کر رہے ہیں۔ اسی لیے  ایران میں بم کی تیاری کے حوالے سےامریکہ اور یورپ کا دعوی ٹھیک نہیں ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha