جوہری صنعت کے بنیادی ڈھانچے کو برقرار رکھنا ہوگا: صالحی

تہران، ارنا - جوہری توانائی تنظیم کے سربراہ نے کہاہے کہ جوہری صنعت کے بنیادی ڈھانچے کو محتاط طور پر برقرار رکھنا ہوگا اور اگر ملک کے اعلی اور سنیئر عہدیدار جوہری صنعت کو حکم دیں تو تھوڑے ہی عرصے میں اس علاقے میں عظیم طوفان ہو جائے گا.

یہ بات علی اکبر صالحی نے آج بروز  ہفتہ  قومی جوہری ٹیکنالوجی کی 15 ویں قومی سالگرہ کی تقریب کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے بتایا کہ جوہری صنعت کے بنیادی ڈھانچے کو محتاط طور پر برقرار رکھنا چاہیے اور اگر ملک کے اعلی اور سنیئر عہدیدار جوہری صنعت کو حکم دیں تو تھوڑے ہی عرصے میں اس علاقے میں عظیم طوفان ہو جائے گا.

صالحی نے بتایا کہ خوش قسمتی سے ایران کے بدخواہوں کی جانب سے اسلامی ایران کے خلاف قانونی اور جابرانہ پابندیوں کے نفاذ کے باوجود، ہم جوہری سائنس کے مختلف شعبوں میں مضبوطی کے ساتھ متعدد منصوبوں پر عمل پیرا ہیں۔

صالحی نے کہا کہ، توانائی کی فراہمی کے منصوبوں میں مدد کے لئے صحت ، صنعت ، زراعت کی صلاحیتوں کے شعبے میں 133 نئی کامیابیوں کا تعارف اس دعوے کا واضح ثبوت ہے کہ یہ کارواں نہیں رک جائے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha