آئی ایم ایف کی ایک نئی رپورٹ میں ایران اور خطے کی معیشت پر مثبت نقطہ نظر

تہران، ارنا - بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی تازہ ترین رپورٹ میں پیش گوئی کی گئی ہے کہ آنے والے برسوں میں ایران کی معیشت بھی خطے کے دوسرے ممالک کی طرح بہتر ہوگی۔

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ نے عالمی معاشی نقطہ نظر سے متعلق اپنی تازہ ترین رپورٹ میں اعلان کیا کہ 2020 میں اسلامی جمہوریہ ایران کی جی ڈی پی کی پیداواری میں 8۔3 فیصد بڑھ گئی جو 2019 کے مقابلے میں 1.5 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔
عالمی مالیاتی ادارے نے پیش گوئی کی ہے کہ ایران کا حقیقی جی ڈی پی 2021 میں معمولی اضافے کے ساتھ 2.5 فیصد اور 2022 میں 2.1 فیصد تک پہنچ جائے گا۔
اس فنڈ کے مطابق ، 2021 میں ایران کی افراط زر کی شرح 36.5 فیصد ہے ، جو 2019 کی افراط زر سے تقریبا 2 فیصد زیادہ ہے، فنڈ 2021 اور 2022 میں بالترتیب 39 اور 27.5 فیصد کی افراط زر کی پیش گوئی کرتا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha