جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے اجلاس کا پہلا دور ختم ہوگیا

تہران، ارنا- ویانا کے گرانڈ ہوٹل میں منعقدہ جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے 18 ویں اجلاس کا انعقاد کیا جا رہا رہے اور اس اجلاس کا پہلا دور مشاورت کے تسلسل کے اتفاق سے ختم کیا گیا۔

ایرانی محکمہ خارجہ کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق، پابندیوں کو ختم کرنے اور جوہری توانائی کے شعبے میں تکنیکی مشاورت کیلئے جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے ممبران کے درمیان دو متوازی اجلاسوں کا انعقاد کیا گیا۔

ماہرین کی سطح پر منعقدہ ان اجلاسوں میں پابندیوں کی منسوخی اور ایران جوہری مسائل کے تکنیکی امور پر تبادلہ خیال کیا جاتا ہے اور پھر اجلاسوں کے نتیجے کی رپورٹ کو کمیشن میں پیش کیا جائے گا۔

جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے اجلاس میں ایرانی وفد کی قیادت کرنے والے نائب ایرانی وزیر خارجہ "سید عباس عراقچی" نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کی بحالی کا پہلا قدم، ایران کیخلاف امریکی پابندیوں کی منسوخی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پابندیوں کی منسوخی ہی سے اسلامی جمہوریہ ایران، اپنے جوہری وعدوں پر پورا اترنے پر تیار ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 9 =