ایرانی فلموں کی ایشیایی، یورپی اور امریکی میلوں میں اعلی کارکردگی

تہران، ارنا- اگرچہ کورونا وبا کی ابتر صورتحال کی وجہ سے ملک میں فعال سنیما گھروں کی تعداد کم کردی گئی ہے؛ لیکن ایرانی فلموں نے اب بھی ایشیاء سے لے کر یورپ اور امریکہ تک اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق، ایرانی ہدایتکار "جواد دارایی" کی بنائی گئی فلم Metamorphosis in the Slaughterhouse کو ہیوسٹن ایشین امریکن انٹرنیشنل فیسٹیول میں نمائش کیلئے پیش کیا جائے گا؛ اس فلم کے پرڈیوسر"جواد کوزہ ای" ہیں۔

ہیوسٹن ایشین امریکن انٹرنشینل فلم فیسٹول کا 3 سے 13 جون تک صحت کے حفاظتی تدابیر پر عمل پیرا ہونے سے ٹیکساس میں انعقاد کیا جائے گا؛ جس میں تربیتی ورکشاپس، دستاویزی، شارٹ اور طویل فلموں کی نمائش اور سوال و جواب کے اجلاس انعقاد کیے جاتے ہیں۔

واضح رہے کہ ہیوسٹن ایشین امریکن فلمی میلے نے 2004 میں او سی اے فاؤنڈیشن کے زیراہتمام میں اپنے کام کا آغاز کیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ "گبرئیل بروسن" کی پروڈیوس کردہ فلم Metamorphosis in the Slaughterhouse ایران، جرمنی اور کینیڈا کے سینما کی مشترکہ پروڈکشن ہے۔

اس کے علاوہ ایرانی خاتون ہدایتکار کی بنائی گئی فلم "یہ وا" کو 11 ویں فرانسوفون فلم فیسٹیول میں شائقین کیجانب سے بہترین فلم کے طور پر منتخب کر لیا گیا۔

یہ فلم ایران اور آرمینیا کی بنائی گئی مشترکہ فلم ہے جس کو اس سے پہلے متعدد بین الاقوامی فلمی میلوں میں نمائش کیلئے پیش کیا گیا ہے؛ اس فلم کی کہانی، زیادہ ترانسانی کے معاشرتی مسائل کے ارد گرد گھومتی ہے۔ 

نیز خاتون ایرانی ہدایتکار "فاطمہ محمدی" کی بنائی گئی شارٹ فلم torridity کو جاپان میں منعقدہ شارٹس فلم فیسٹیول میں نمائش کیلئے پیش کیا جائے گا۔

"شارٹس" دنیا کے سب سے معروف مختصر فلمی میلوں میں سے ایک ہے جس کے فاتح کا اکیڈمی ایوارڈ میں تعارف کیا جائے گا۔

نیز میلے کی بہترین شارٹ فکشن اور نان فکشن فلموں کو آسکر اکیڈمی میں بھی پیش کیا جائے گا۔

اس فلم فیسٹیول کا جون مہینے کے دوران جاپان میں انعقاد کیا جائے گا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha