ایران اور چین کی جامع دستاویز امریکہ کیلئے ایک اہم انتباہ ہے: ایرانی اسپیکر

تہران، ارنا – ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ ایران چین کے جامع تعاون کی دستاویز پر دستخط کرنا امریکہ کے لئے ایک اہم انتباہ ہے کہ سمجھے بین الاقوامی تعلقات امریکہ کے لیے نقصان دہ ہیں اور تیزی سے تبدیل ہورہے ہیں۔

یہ بات محمد باقر قالیباف نے اتوار کے روز پارلیمنٹ کے حکم سے پہلے ایک تقریر میں کہی۔

انہوںنے کہا کہ ایران چین کے جامع تعاون کی دستاویز پر دستخط کرنا امریکہ کے لئے ایک اہم انتباہ ہے کہ سمجھے بین الاقوامی تعلقات امریکہ کے لیے نقصان دہ ہیں اور تیزی سے تبدیل ہورہے ہیں۔ اب وہ اس پوزیشن میں نہیں ہے کہ وہ آزاد ممالک پر یکطرفہ طور پر کسی ماڈل ، پروگرام یا معاہدے کو مسلط کرے۔

قالیباف نے کہا کہ ہم اس اقدام کا خیرمقدم کرتے ہیں کیونکہ اس دستاویز پر دستخط ایک اسٹریٹجک اقدام ہے اور اگر واقعتا اس سے مراد یہ ہوئے کہ دنیا مغرب تک محدود نہیں ہے اور اگلی صدی ایشیاء کی صدی ہوگی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اب امریکہ آزاد ریاستوں پر یک طرفہ طور پر کسی ماڈل ، پروگرام یا معاہدے کو مسلط کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہے۔

ایرانی اسپیکر نے کہا کہ ایران اور چین کے معاہدے پر جلد دستخط ہوسکتا تھا، ہمارا یقین ہے کہ اقتصادی اور سیاسی تعاون کی تشکیل کے ساتھ ساتھ امریکہ کے جابرانہ دباؤ کو مؤثر طریقے سے مقابلہ کرنے کے لئے قیمتی وقت ضائع ہوچکا ہے ،تاہم قومی مفادات کا تحفظ کرتے ہوئے اس دستاویز کو حقیقی معاشی اور سیاسی منصوبوں ، پروگراموں اور تعاون میں تبدیل کرنے کا موقع اٹھایا جانا چاہئے ۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha