ایرانی عوام مہذب اور مہمان نواز ہیں: یوکرائنی سیاح جوڑے

کاشان، ارنا- ایران کے دورے پر آئے ہوئے یوکرائنی سیاح جوڑے نے کہا ہے کہ اکثر مغربی باشندوں کے خیالات کے برعکس، ایرانی عوام مہذب اور مہمان نواز ہیں اور ہم ایران کو اپنے سفر کیلئے چننے پر بہت خوش ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "ڈنیل یاورویچ" نے منگل کے روز ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

یوکرائنی سیاح نے مزید کہا کہ انہوں نے پہلی بار کیلئے ایران کا 10 روزہ دورہ کرتے ہوئے تہران، اصفہان، شیراز، یزد اور کاشان کے شہروں کی سفر کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران ایک بہت خوبصورت، تاریخی اور مہذب ملک ہے جس میں بہت ساری آثار قدیمے کی اشیا اور تاریخی مقامات ہیں۔

یاورویچ نے کہا کہ کاشان، ایران کے سیاحتی شہروں میں سے ایک ہے اور ہم نے اب تک ٹیپ سیالک اور طباطبائی گھر کا دورہ کیا ہے جس سے ہمیں ایرانی پرانی تاریخ کے کچھ حصے سے واقفیت ملی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جو لوگ ایران کو نہیں جانتے وہ اس ملک کو ثقافتی طور پر ایک محدود ملک سمجھتے ہیں، جبکہ اس میں ایک مہذب اور مہمان نواز لوگ ہیں۔

یوکرائنی سیاح نے ایران کے دورے سے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی عوام بدستور اپنی روایات کا احترام کرتے ہیں جبکہ سوویت یونین، یوکرائنی عوام کی ثقافت میں قدرے تبدیلی لائی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی ور یوکرائنی عوام کے درمیان کچھ مشابہتیں بشمول کپڑے پہننے کا انداز ہے اور دونوں ملکوں کے درمیان کچھ الفاظ جیسے بازار، میدان اور گلیم بھی ایک جیسے ہیں۔

ان کی بیوی "النا اسپنیکوا" نے بھی کہا کہ خوبصورت ایرانی خواتین مہمان نوازی اور دوسروں سے ملنے جلنے میں مہارت رکھتی ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ابیانہ گاؤں ایران کے بہترین انوکھے اور یادگار علاقوں میں سے ایک ہے اور یہ گاؤں زندگی کا مضبوط احساس سے بھر پور ہے۔

انفارمیشن ٹکنالوجی (آئی ٹی) کے شعبے میں کام کرنے والے 28 سالہ یوکرائنی جوڑے نے بتایا ہے کہ ان کے دورہ این کا مقصد  تاریخی اور ثقافتی شہروں کے دورے کے علاوہ، کار وبار اور تجارت ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha