"تہران سے روم تک" مونوگرافک ویڈیو کلیکشن کی نقاب کشائی کی گئی

تہران، ارنا- ایران اور اٹلی کے فنکاروں کے بنائے گئے بصری فن پاروں سے متعلق "تہران سے روم تک؛ آرٹ کی کھڑکی سے سفر" نامی بنائی گئی سات قسطی مونوگرافک ویڈیو کلیکشن کی پہلی قسط کی رونمائی کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران میں قائم اطالوی سفارتخانے کے زیر اہتمام میں دونوں ملکوں کے درمیان ثقافتی تعلقات کے فروغ کے سلسلے میں ایران اور اٹلی کے فنکاروں کے بنائے گئے بصری فن پاروں سے متعلق "تہران سے روم تک؛ آرٹ کی کھڑکی سے سفر" نامی بنائی گئی سات قسطی مونوگرافک ویڈیو کلیکشن کی پہلی قسط کل بروز جمعرات کی رونمائی کی گئی جس میں بصری آرٹ کے فنکاروں نے صحت کے حفاظتی تدابیر پر عمل پیراہوتے ہوئے حصہ لیا تھا۔

یہ کلیکشن جو اطالوی سفارتخانے کے زیر اہتمام اور "یاسمین زندیہ" اور "احسان رونق" کے تعاون سے بنائی گئی ہے، میں ایران کے پانچ اور اٹلی کے دو فنکاروں کی زندگی پر مبنی ہے اور اس سات قسطی ویڈیو کلیکشن کی ہر قسط میں ایک فنکار کا تعارف کیا جاتا ہے۔

منعقدہ اس تقریب میں اس ویڈیو کلیکشن کے تعارف کے ٹیزر اور ایرانی فنکار "بیژن بصیری" سے متعلق بنائی گئی پہلی قسط کی نمائش کی گئی۔

ایران میں تعینات اطالوی سفیر "چوزبہ پرونہ" نے اس ویڈیو کلیکشن کے بنانے کے مقصد کو ثقافتی شعبوں بالخصوص بصری آرٹ کے میدان میں ایران اور اٹلی کے تعلقات کی گہرائی کا تعارف تھا۔

 منعقدہ اس تقریب میں حالیہ معاشرے میں فنکاروں کے کردار اور سفارتی ثقافتی ڈپلومسی کی اہمیت کا جائزہ بھی لیا گیا۔

اس مجموعے کے پہلی قسط کو بیژن بصیری کے ایک کام کا نام دیا گیا ہے جسے "تپش" کہتے ہیں، جو ماؤنٹ ویسوویئس کے بصری فنکارانہ تجربے سے متاثر ہے، جو اٹلی کے مشہور ترین فعال آتش فشاں اور اس کے مختلف حصوں میں سے ایک ہے؛ بصیری آتش فشاں سے لاوا کی روانگی کو انسانی دماغ میں فکر کی تخلیق سے تشبیہ دیتے ہیں۔

 **9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 15 =