ایران پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرسکتا ہے: عمران خان

اسلام آباد، ارنا - پاکستانی وزیر اعظم نے کہا ہے کہ ملک کا جغرافیائی مقام خطے میں پائیدار امن اور سلامتی پر انحصار کرتا ہے، ایران ایک بھرپور ذریعہ کے طور پر پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرسکتا ہے۔

یہ بات "عمران خان" نے بدھ کے روز اسلام آباد سیکیورٹی ڈائیلاگ فورم کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ معاشی اہداف کا حصول اور ملک کے اسٹریٹجک مقام سے فائدہ اٹھانا اور خطے میں سلامتی اور امن کے قیام کے بغیر حاصل نہیں کیا جاسکتا۔
عمران خان نے کہا کہ افغانستان میں خصوصا چین سے پاکستان کے وسط ایشیاء تک افغانستان کے راستے تجارتی راستہ امن علاقائی نقل و حمل کی سلامتی کے لئے بھی اہم ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ہمارے ملک کے ساتھ ہی واقع ہے اور یہ توانائی کا ایک ذریعہ ہے جس کے ذریعے وہ پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرسکتا ہے۔
پاکستان میں دسمبر کے آغاز میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا تھا کہ گیس پائپ لائن کو ایران سے پاکستانی سرحد تک بڑھایا گیا ہے اور غیر ملکی طاقتوں کی طرف سے عائد کچھ پابندیوں کے باوجود دونوں فریقوں کو اس منصوبے کو مکمل کرنے کے لئے شدید مراعات دی گئیں۔
محمد علی حسینی نے پاکستانی "روز نیوز" نیٹ ورک کو انٹرویو دیتے ہوئے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ توانائی ، خاص طور پر تیل اور گیس سے مالا مال ممالک میں سے ایک ہے ، دوسری طرف پاکستان سمیت کوئی بھی ملک توانائی ترقی اور ترقی کی بنیادی ضروریات میں سے ایک ہے۔
تفصیلات کے مطابق، اسلام آباد میں سیکیورٹی ڈائیلاگ فورم کل تک جاری رہے گا اور پاک فوج کے کمانڈر میجر جنرل قمر جاوید باجوہ کل کے اجلاس میں تقریر کریں گے۔
یہ پروگرام پاکستان نیشنل سیکیورٹی ایجنسی کے ذریعہ ملک میں چار ممتاز تھنک ٹینکوں کی شرکت کے ساتھ ترتیب دیا گیا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 4 =