امریکہ کو جوہری معاہدے میں واپسی کیلئے پہلا قدم اٹھانا ہوگا: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران کو مغربی ملکوں پر بھروسہ نہیں ہے کیونکہ انہوں نے کبھی بھی اپنے جوہری وعدوں کو پوارا نہیں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ نے جوہری معاہدے کو چھوڑا لہذا؛ اسے اس معاہدے میں از سر نو شمولیت پر پہلا قدم اٹھانا ہوگا۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز بدھ کو پودے لگانے کی تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے کیا جس میں ایران میں تعینات غیر ملکی سفارتکاروں کی بیویاں بھی شریک تھیں۔

اس موقع پر انہوں نے جوہری معاہدے کی بحالی سے متعلق ایران کیجانب سے پہلا قدم اٹھانے کے سوال کے جواب میں کہا کہ امریکہ نے جوہری معاہدے کو چھوڑا لہذا اسے اس معاہدے میں از سر نو شمولیت پر پہلا قدم اٹھانا ہوگا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ نے ایک سال کیلئے ایران کیجانب سے اپنے جوہری وعدوں پر عمل کرنے کی تصدیق کی اور ساتھ ہی عالمی جوہری ادارے نے اپنی مسلسل 5 رپورٹوں میں اس بات کی تصدیق کی۔

انہوں نے کہا کہ اگر مسئلہ عدم اعتماد ہے تو یہاں اس بات پر روشنی ڈالنی ہوگی کہ ایران کو مغربی ملکوں پر بھروسہ نہیں ہے کیونکہ انہوں نے کبھی بھی اپنے جوہری وعدوں کو پورا نہیں کیا؛ لہذا اگر یہ مسئلہ حل ہوجائے تو ایرانی سپریم لیڈر کے مطابق ہم جوہری معاہدے کے نفاذ کے خواہاں ہیں اور اس کا بھر پور نفاذ کریں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha