ایرانی سپریم لیڈر کے نام میں روسی صدر کے پیغام کو قائد انقلاب کے مشیر کا حوالہ کیا گیا

تہران، ارنا- تہران میں تعینات روسی سفیر نے ایرانی سپریم لیڈر کے مشیر سے ایک ملاقات کے دوران، قائد اسلامی انقلاب کے نام میں روسی صدر کے خط کو ان کا حوالہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق، "علی اکبر ولایتی" نے آج بروز ہفتے کو "لوان جاگاریان" سے ملاقات کی۔

اس موقع پر انہوں نے ایران اور روس کو دو اہم ہمسایہ اور دوست ممالک قرار دیتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے تجارتی، معاشی اور ثقافتی تعاون، تہران اور ماسکو کے مابین مختلف شعبوں میں اسٹریٹجک تعلقات کے تسلسل کا ایک اہم عنصر ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران اور روس کے درمیان تعلقات باہمی احترام پر مبنی ہیں اور علاقائی تعلقات اور  نئی تبدیلیوں سے تہران اور ماسکو کے مابین تعاون میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

ولایتی نے کہا کہ اسٹریٹجک تعلقات کیلئے بین الاقوامی میدان اور علاقائی سطح پر موثر تعاون کی ضرورت ہے۔

سپریم لیڈر کے مشیر نے ایران، روس اور شام کے درمیان تعاون کے ذریعے شام کیخلاف 70 ممالک کی شرکت سے مسلط کردہ جنگ کیخلاف مزاحمت اور کامیابی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی تعاون انتہائی اہم ہے۔

انہوں نے آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان کشیدگی کے حل میں کردار ادا کرنے سے متعلق ایران اور روس کے درمیان تعاون پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ خطے کی موجودہ صورتحال کچھ اس طرح  ہے کہ دونوں ممالک ایک دوسرے کیساتھ ہم آہنگی سے دوسرے شعبوں میں بھی تعاون کر سکتے ہیں۔

دراین اثنا روسی سفیر نے ایرانی سپریم لیڈر کے نام میں روسی صدر کے پغیام کو ولایتی کا حوالہ کردیا اور دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون پر زور دیا۔

اس ملاقات میں دونوں فریقین نے دفاعی، جوہری، آئل، زارعت، تجارت اور صنعتی شعبوں میں تعلقات کے فروغ پر زور دیا۔

اس کے علاوہ روسی سفیر اور ایرانی سپریم لیڈر کے مشیر نے تازہ ترین علاقائی اور بین الاقوامی تبدیلیوں کا جائزہ لیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 1 =