پابندیوں کو اٹھانا امریکی پالیسی میں تبدیلی کی سب سے اہم علامت ہے: نائب ایرانی صدر

یزد، ارنا – سنیئر نائب ایرانی صدر نے کہا ہے کہ اگر امریکہ مذاکرات کرنا چاہتا ہے تو اسے پہلے پابندیوں کو ختم کرنا ہوگا۔

یہ بات اسحاق جہانگیری نے صوبے یزد میں مزاحمتی معیشت کے ہیڈ کوارٹر کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ کہ اگر امریکہ مذاکرات کرنا چاہتا ہے تو اسے پہلے پابندیوں کو ختم کرنا ہوگا اور امریکہ کی طرف سے عائد کردہ جابرانہ پابندیوں جو بین الاقوامی معاہدوں  کے خلاف ہیں، کا خاتمہ ایران کے ساتھ اس ملک  کے سیاسی انداز میں تبدیلی کی علامت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکی پابندیوں نے ایران پر دباؤ ڈالا لیکن وائٹ ​​ہاؤس کے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں کرسکے  اور یقینی طور یہ پابندیاں ناکام ہوگئیں اور یہ ناکامی مزاحمتی معیشت کی پالیسیوں پر عمل پیرا ہونے کا نتیجہ تھی۔

جہانگیری نے کہا کہ پابندیوں کی وجہ سے پیدا ہونے والے مسائل ابھی ختم نہیں ہوئے ہیں اور امریکہ اس ظالمانہ اور انسانی حقوق کی مخالف پالیسی کو جاری رکھے ہوئے ہے اور اور پابندیاں ختم نہ ہونے تک ملک معاشی جنگ کی حالت میں ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha