کیو ایس کی درجہ بندی میں ایرانی جامعات کی پوزیشن میں بہتری

تہران، ارنا- اسلامی عالمی سائنس حوالہ ڈیٹا بیس کے سربراہ نے کہا ہے کہ کیو ایس ورلڈ 2021 کی نئی موضوعاتی درجہ بندی میں 17 مختلف مضامین میں ایرانی جامعات کی پوزیشن میں بہتری آئی ہے۔

"محمد جواد دہقانی" نے مزید کہا کہ جامعات کی درجہ بندی کرنے والے برطانوی ادارے کیوایس ورلڈ نے سال 2021 کے لیے دنیا کی یونیورسٹیوں کی 11 ویں موضوعاتی درجہ بندی شائع کی؛ اس موضوعاتی درجہ بندی میں، 5 عمومی شعبوں اور 51 مخصوص مضامین کا جائزہ لیا گیا ہے اور اس درجہ بندی میں ایران کی 15 یونیورسٹیاں 17 مضامین کے شعبوں میں موجود ہیں۔

کیو ایس کی سالانہ رینکنگ میں تعلیمی اداروں کی چھ شعبوں تعلیمی ساکھ، اساتذہ کی ساکھ، فیکلٹی میں طلبہ کا تناسب، فیکلٹی فی اقتباسات، انٹرنیشنل فیکلٹی تناسب اور بین الاقوامی طالب علموں کے تناسب کے حوالے سے کارکردگی کا جائزہ لیا جاتا ہے جس کے بعد جامعہ کو نمبر دے کر اُس کی درجہ بندی کی جاتی ہے۔

اسلامی عالمی سائنس حوالہ ڈیٹا بیس کے سربراہ کے مطابق، یہ ڈیٹا بیس سالانہ منعقد ہونے والی ایک اہم رینکنگ میں مختلف موضوعات کی یونیورسٹیوں کی جانچ اور جائزہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ کیو ایس موضوعاتی درجہ بندی کے لئے درکار معلومات کا کچھ حصہ اسکوپس حوالہ ڈیٹا بیس کے ذریعے حاصل کیا گیا ہے اور دوسرا حصہ سروے کی معلومات سے حاصل کیا گیا ہے۔

دہقانی نے کہا کہ 2021 میں کیو ایس کی درجہ بندی نے قدرتی علومی، انجینئرنگ اور ٹکنالوجی، زندگی سائنس اور طب، معاشرتی علوم اور فنون اور انسانیت کے پانچ عمومی شعبوں کی شکل میں 51 مضامین میں دنیا کی اعلی جامعات کو درجہ دیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha