شام میں ایرانی ٹیکنالوجی انوویشن اور ایکسپورٹ ہاؤس کا قیام

تہران، ارنا- شام میں ایرانی ٹیکنالوجی انوویشن اور ایکسپورٹ ہاوس کا آج بروز بدھ کو قائم کیا گیا جس کی تقریب میں نائب ایرانی صدر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی کے امور اور شامی وزیر برائے اعلی تعلیم اور تحقیقات نے حصہ لیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق، نائب ایرانی صدر "سورنا ستاری" کے دورے شام کے دوسرے دن میں شام میں ایرانی ٹیکنالوجی انوویشن اور ایکسپورٹ ہاؤس کو قائم کیا گیا جو 620 کلومیٹر کے رقبے پر پھیلا ہوا ہے اور اس میں بجلی، الکٹرانک، ادویات، انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی، حیاتیات اور زارعت کے شعبوں میں 40 ایرانی کمپینوں کی مصنوعات کو نمائش کیلئے پیش کیا گیا ہے۔

اس ہاوس میں 40 علم پر مبنی اور تخلیقی کمپنیوں کی مصنوعات کی نمائش ہوگی جس کا مقصد شام کو ایرانی علم پر مبنی، تکنیکی اور تخلیقی مصنوعات اور کامیابیوں کی برآمد کو آسان بنانا ہے۔

یہ مرکز جو پہلے چین، کینیا، آرمینیا اور ترکی میں قائم کیا گیا ہے؛ دوسرے ممالک کیساتھ ایران کی ٹکنالوجی ڈپلومیسی کو بڑھانے کیلئے  تیار ہے۔

اس تقریب میں ستاری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کے حالیہ دورہ عراق سے تعمیری نتائج برآمد ہوئے اور دونوں ممالک کے مابین تعاون میں مزید اضافے کا راستہ اور ہموار ہوگیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ شامی وزیر اعظم اور دیگر حکام سے سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں ایرانی مصنوعات کو شام میں برامد پر تعمیری مذاکرات کیے گئے۔

 یہ بات قابل ذکر ہے کہ ستاری کے دورے شام کے دوران، ایرانی وزارت برائے سائنس اور ٹیکنالوجی اور شامی وزارت برائے اعلی تعلیم اور تحقیات کے درمیان ایک مفاہمتی یادداشت پر دستخط کیا گیا جس کے تحت دمشق میں ایک ریفرنس لیبارٹری کے قیام کیلئے 10ملین ڈالر کی ایک کریڈٹ لائن بنائی ہوگی۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha