شام میں میڈیکل ٹیکنالوجی اور طبی ساز و سامان کی برآمد پر تیار ہیں: نائب ایرانی صدر

تہران، ارنا- نائب ایرانی صدر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی امور نے شامی وزیر صحت سے ایک ملاقات کے دوران اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک، شام میں میڈیکل ٹیکنالوجی اور طبی ساز و سامان کی برآمدات پر تیار ہے۔

تفصیلات کے مطابق، شام کے دورے پر آئے ہوئے "سورنا ستاری" نے آج بروز منگل کو "حسن الفباش" سے ملاقات اور گفتگو کی۔

اس موقع پر نائب ایرانی صدر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی امور نے کہا کہ ایران میں حالیہ سالوں کے دوران، ایکولوجی ٹیکنالوجی نے بہت بڑی ترقی کی ہے اور ہماری علم پر مبنی کمپنیوں نے بہت سارے شعبوں بشمول ادویات، طبی ساز و سامان اور بایو ٹیکنالوجی کے میدان میں انتہائی قابل قدر پیشرفت کی ہے۔

ستاری نے کورونا وبا کے دوران، تکنیکی ضروریات کو پورا کرنے کی فراہمی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسی عرصے کے دوران، ایکولوجی ٹیکنالوجی کے ذریعے وینٹی لیٹر اور دیگر طبی سازوسامان کی تیاری کی گئی جن میں سے بعض کو شام میں بھی برآمد کیا گیا اور یہ ساز و سامان یورپی معیار کے مطابق ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایران، ادویات اور طبی سامان کی فراہمی اور ضروری تربیت کی فراہمی جیسے شعبوں میں شام کیساتھ تعاون کرنے کیلئے تیار ہیں۔

اس موقع پر شامی وزیر صحت نے کہا کہ بہت اچھی بات ہوگی اگر کچھ شامی ڈاکٹر مختصر کورس کیلئے ایران جاسکیں؛ کیونکہ ہمارا ملک محاصرے میں ہے اور جو سہولیات بیرون ممالک سے درآمد کی جاتی ہیں وہ بہت کم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم شام میں قوانین پر عمل پیرا ہیں؛ ایران سے ادویات کی درآمد شام کیلئے بہت ضروری ہے اور کسی بھی ڈاکٹر کو غیر معیاری دوا درآمد کرنے کی اجازت نہیں ہے؛ کیوںکہ سرکاری چینلز کے ذریعے معیاری ادویات ہمارے ملک میں درآمد کی جانی چاہیے۔

واضح رہے کہ نائب ایرانی وزیر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی نے ایک سائنسی اور تجارتی وفد کی قیادت میں شام کا دورہ کیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha