گذشتہ آٹھ سالوں میں ایرانی گیس کی برآمدات میں 100 فیصد اضافہ

تہران، ارنا - گذشتہ آٹھ سالوں میں ایران کی گیس کی برآمدات میں 100 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور سنہ 1392 کو 9 ارب مکعب میٹر سے 18 بلین مکعب میٹر تک پہنچ گئی ہے۔

یہ بات ایرانی نیشنل گیس کمپنی کے منیجنگ ڈائریکٹر حسن منتظر تربتی نے منگل کے روز ارنا کے نما ئندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ترکی اور عراق کو ایرانی گیس کی برآمدات کے معاہدے مرکزی معاہدوں کی حیثیت سے جاری ہیں اور جمہوریہ آذربائیجان اور ارمینیا کو بھی برآمدات بدستور جاری ہیں۔

نیشنل ایرانی گیس کمپنی کے سی ای او نے کہا کہ ترکی کو گیس کی برآمد کے معاہدے کی توسیع کے لئے ابتدائی بات چیت ہوئی ہے یقینا ہمارے پاس معاہدے میں توسیع کے لئے کافی وقت ہے۔

انہوں نے بتایا کہ عام طور پر آخری پانچ سالوں میں گیس کی برآمد کے معاہدے میں توسیع کے لئے بات چیت شروع ہوتی ہے اور معاہدے کے اختتام کے قریب ہونے پر یہ مذاکرات سنجیدہ ہوجاتے ہیں۔ ہم ابھی سنہری مقام پر ہیں اور ہمیں ان مذاکرات کو جاری رکھنا چاہئے۔

انہوں نے پاکستان کو گیس کی برآمدات کی تازہ ترین صورتحال کے بارے میں کہا کہ ہمارا پاکستان سے معاہدہ ہے  لیکن اس پر ابھی تک عمل نہیں کیا گیا کیوں کہ پاکستان کو چاہیے کہ اپنی سرزمین کے اندر پائپ لائن کا نفاذ کرتا تھا۔

نائب ایرانی وزیر تیل نے کہا کہ ایرانی گیس کی یورپ کو برآمدات پر عمل درآمد نہ کرنے کی سب سے اہم وجہ سیاسی صورتحال ، پابندیوں اور ایران کے خلاف بین الاقوامی تعلقات ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران سے گیس کی درآمد یورپ کے لئے ایک فائدہ ہے اور ایران دنیا میں گیس کے ذخائرکے دوسرا بڑا ملک ہے اور یورپ ایران کو گیس کے مستحکم اور قابل اعتماد سپلائر کے طور پر دیکھ سکتا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 1 =