"کوو ایران برکت" ویکسین اعلی بین الاقوامی معیار کے مطابق تیار کی جارہی ہے

تہران، ارنا- ایران کی کورونا قومی روک تھام سائنسی کمیٹی کی خاتون ممبر نے کہا ہے کہ "کوو ایران برکت" ویکسین اعلی بین الاقوامی معیاروں کے مطابق تیار کی جا رہی ہے۔

ان خیالات کا اظہار خاتون ڈاکٹر "مینو محرز" نے جمعرات کے روز ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ کچھ لوگ ایران میں تیار کردہ کسی بھی مصنوع  جس میں ادویات یا ویکسین شامل ہیں، سے متعلق مایوسی کا شکار ہیں اور ان کا خیال ہے کہ ایرانی دواسازی کی مصنوعات کا ضروری اثر نہیں ہوتا ہے؛ جبکہ واقعی ایسا نہیں ہے۔

محرز نے کہا کہ میں کچھ افواہوں سے مکمل طور پر متفق نہیں ہوں کہ ایرانی سامان ناقص معیار کی ہے اور بعض اوقات معاشرے میں سنا جاتا ہے؛ میں لوگوں کو مشورہ دیتی ہوں کہ وہ مختلف شعبوں میں ملکی معیشت کی ترقی کے لئے ایرانی مصنوعات کو استعمال کریں۔

واضح رہے کہ ایرانی ماہرین اور سائنسدانوں کی کوششوں سے تیار کردہ "کوو ایران برکت" نامی پہلی کورونا ویکسین کے کلینیکل مطالعہ کے پہلے مرحلے کا انسانی انجیکشن 29 دسمبر کو تین رضاکار افراد پر شروع ہوا جس کی تقریب میں ایرانی وزیر صحت نے بھی حصہ لیا تھا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اس ویکسین کے انسانی ٹیسٹ کے پہلے مرحلے میں 56 رضاکار موجود ہیں۔ اس ویکسین کے کلینیکل مطالعہ کے پہلے مرحلے میں 56 رضاکاروں میں سے 35 رضاکاروں کو کورونا ویکسین کا دوسرا انجیکشن لگایا گیا ہے اور باقی 21 افراد کو بھی رواں ہفتے کے آخر تک دوسرا انجکشین لگایا جاتا ہے۔

 رضاکاروں کے آخری دوسرے انجیکشن کے دو ہفتوں بعد، ان کے خون کا آخری نمونہ لیا جاتا ہے  اور پھر انسانی کورونا ویکسین ٹیسٹ کے پہلے مرحلے کا مطالعہ مارچ کے اوسط میں ختم ہوجائے گا اور اس کے نتائج سامنے آنے کے بعد اسے فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کو بھیجا جائے گا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 9 =