ایرانی وزیر داخلے کی تاجک صدر سے سیکورٹی تعاون پر بات چیت

ماسکو، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر داخلہ نے تاجک صدر کیساتھ ایک ملاقات کے دوران، دونوں ملکوں کے درمیان بالخصوص سیکورٹی میدان میں تعاون پر گفتگو کی۔

تفصیلات کے مطابق، تاجیکستان کے دورے پر آئے ہوئے "عبدالرضا رحمانی فضلی" نے آج بروز منگل کو "امامعلی رحمان" سے ملاقات کی۔

ملاقات میں دونوں فریقین نے باہمی دلچسبی امور سمیت مختلف شعبوں بالخصوص سیکورٹی کے میدان میں تعاون پر بات چیت کی۔

اس ملاقات میں اس بات پر زور دیا گیا کہ اب تک مختلف شعبوں میں باہمی تعاون سے متعلق 160 دستاویزات پر دستخط کیا گیا ہے۔

در این اثنا تاجک صدر نے دونوں ملکوں کے درمیان جامع تعاون معاہدے کے نفاذ کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس سے ایران اور تاجیکستان کے درمیان تعاون کی تقویت ہوگی۔

اس کے علاوہ  دونوں فریقین نے جغرافیائی سیاسی مقابلوں کی شدت اور دنیا اور علاقائی سلامتی کے لئے نئے خطرات جیسے اہم امور پر تبادلہ خیال کیا۔

نیز، کورونا عالمیگر وبا اور دنیا میں رونما ہونے والے معاشی اور مالی بحران جو بلاشبہ علاقے کی حالیہ اور مستقبل کیلئے خطرہ ہے، کا جائزہ لیا گیا۔

اس کے علاوہ دونوں فریقین نے کووڈ-19 سے نمٹنے کیلئے اٹھائے گئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔

نیز، ایرانی وزیر داخلہ اور تاجک صدر نے علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر گفتگو کی۔

واضح رہے کہ عبدالرضا رحمانی فضلی نے اپنے تاجک ہم منصب کی باضابطہ دعوت سے 22 فروری کو تاجیکستان کا دورہ کیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اب تک ایرن اور تاجیکستان کے درمیان مشترکہ کمیشن کے 13 اجلاسوں کا انعقاد کیا گیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 9 =