امریکہ اور مغرب نے مسلط کردہ جنگ میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کی: علامہ رئیسی

تہران، ارنا - ایرانی عدلیہ کے سربراہ نے کہا ہے کہ ہمیں دفاع مقدس کے دوران امریکہ اور مغرب کی انسانی حقوق کی پامالی دنیا کے سامنے پیش کرنی ہوگی اور دنیا بھر کے لوگوں کو یہ سمجھانا ہوگا کہ امریکیوں اور مغربی ممالک نے سلط کردہ جنگ کے دوران کس طرح اپنی خواہشات کے حصول کے لئے انسانی حقوق کی خلاف ورزی کی۔

یہ بات علامہ سید "ابراہیم رئیسی" نے منگل کے روز عالمی دفاع مقدس کے حقوقی اور بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ مسلط کردہ جنگ کے دوران مغربی ممالک کے ذریعہ صدام کو فراہم کردہ سیاسی ، ہتھیاروں اور مالی امداد کی فہرست بہت طویل ہے۔
علامہ رئیسی نے کہا کہ دنیا بھر کے انسانی حقوق کے دعویداروں کو لازمی طور پر ہمارے جانبازوں کے بستر پر جاکر دیکھنا ہے کہ یہ ہیرو 30 سال سے بستر پر کس طرح بیٹھے بیٹھے ہیں ، کیمیائی بم دھماکوں اور اعصابی ہتھیاروں کے اثرات اور تکلیف کو برداشت کر رہے ہیں۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ یقینی طور پر مسلط کردہ ممالک کی شراکت داری کے ساتھ ایسے جرائم ایک منصفانہ عدالت میں مقدمہ چلنا چاہیئے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 10 =