فارسی اسلام کی دوسری زبان اور ایران اور افغانستان کی شناخت کا لازمی جزو ہے

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی (ارنا) کے سربراہ اور افغان نیشنل کانگریس پارٹی کے رہنما نے ایک ملاقات کے دوران، دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون سمیت "نوروز ڈپلومسی" کی تقویت پر زور دیا۔

تفصیلات کے مطابق، "محمد رضا نوروز پور" نے آج بروز اتوار کو ارنا ہیڈ آفس میں "عبدالطیف پدارام" سے ملاقات کی؛ اس ملاقات میں ایران کی ابرار معاصر انٹرنیشنل اسٹڈیز اینڈ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے ڈائریکٹر "عابد اکبری" نے بھی حصہ لیا تھا۔

اس موقع پر نوروز پور نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ارنا نیوز ایجنسی، باہمی تعلیمی اور ثقافتی تعلقات کا فروغ بشمول تہران اور کابل میں افغان طلباء اور اسکالرز کو خبروں، تصاویر، ویڈیوز اور ملٹی میڈیا کی تعلیم دینے کیلئے تیار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور افغانستان کے درمیان بہت سی مشترکات اور تاریخی اور ثقافتی جڑیں ہیں؛ جن میں سے "نوروز" تہوار اور فارسی زبان اور ادب کا نام لیا جاسکتا ہے جو دوطرفہ، علاقائی اور یہاں تک کہ بین الاقوامی سطح پر مشترکہ تعاون کا موضوع بن سکتے ہیں۔

ارنا چیف نے کہا کہ فارسی زبان و ادب اسلام کی دوسری زبان کے طور پر؛ ایران، افغانستان اور تاجکستان سمیت اس خطے کی اقوام کی شناخت کا ایک حصہ ہے اور اس زبان میں تخلیق کردہ کاموں کو نہایت قیمتی انسانی ورثہ سمجھا جاتا ہے جس کو مشترکہ طور پر فروغ اور تقویت دینی ہوگی۔

نوروز پور نے میروزپوٹیمیا سے لے کر ٹرانسسوکیانا تک اس علاقے میں موجود قبائل کی ایک مشترکہ تہوار کو نوروز قرار دیا اور کہا کہ علاقے کی تمام قومیں نوروز سے دلچسبی رکھتی ہیں اور اس میں کوئی نظریاتی اختلاف نہیں ہے جس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ ہمیں مشترکات پر کسی بھی چیز سے زیادہ سرمایہ کاری کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے فارسی زبان کیخلاف مقابلہ کرنے والوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ فارسی زبان کیخلاف مقابلہ ایرانی قوم کیخلاف مقابلہ نہیں ہے بلکہ اس خطے میں بسنے والی تمام قوموں کی شناخت کا مقابلہ ہے۔

اس موقع پر افغان نیشنل کانگریس پارٹی کے رہنما نے تہران اور کابل کے درمیان تمام شعبوں میں تعلقات کے فروغ میں دلچسبی کا اظہار کرلیا۔

انہوں نے  کل بروز پیر کو آرٹس اور ثقافت کے شعبوں میں تعلقات کی تقویت کے مقصد سے "نوروز ڈپلومسی" کے خصوصی نشست کے انعقاد کو سراہتے ہوئے اسے ایران اور افغانستان کے تعلقات کے فروغ میں تعمیری قرار دے دیا۔

افغانستان نیشنل کانگریس پارٹی کے رہنما نے ارنا ہیڈ آفس کے مختلف حصوں کا دورہ بھی کیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 7 =