ایران اور عالمی جوہری ادارے نے تعمیری مذاکرات کیے: غریب آبادی

لندن، ارنا- ویانا کی بین الاقوامی تنظیموں میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے کہا ہے کہ ایران اور آئی اے ای اے کے درمیان احترام پر مبنی اور تعمیری مذاکرات ہوئے۔

ان خیالات کا اظہار "کاظم غریب آبادی" نے آج بروز اتوار کو ایک ٹوئٹر پیغام میں کرتے ہوئے کہا کہ مذاکرات کے نتائج آج کی رات نشر ہوں گے۔

واضح رہے کہ عالمی جوہری ادارے کے سربراہ "رافائل گروسی" کل بروز ہفتے کو ایران کے دورے پر پہنچ گئے جہاں انہوں نے ایرانی جوہری ادارے کے سربراہ سے جوہری معاہدے کی تازہ ترین تبدیلیوں اور ایرانی جوہری وعدوں میں کمی لانے سے متعلق بات چیت کی۔

صالحی نے اس سے پہلے عالمی جوہری ادارے کے دورہ ایران سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایرانی جوہری سرگرمیوں کی نگرانی کو روکنے سے متعلق ایرانی پارلیمنٹ میں منظور کیے گئے قانون کے آرٹیکل 6 کے نفاذ اور اس حوالے سے آئی اے ای اے کے نام پر ایران کے خط کے بعد گروسی نے جلدی سے دورہ ایران کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ ایران جوہری ادارے نے آئی اے ای اے سے تعاون کے سلسلے میں اس دورے سے اتفاق کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ چونکہ ایرانی پارلیمنٹ میں پابندیوں کی منسوخی سے متعلق اسٹریٹجک اقدامات اٹھانے کا قانون ہماری قوم کے مفادات کی فراہمی کے سلسلے میں ہے اور دوسرے فریق نے بھی پابندیوں کی منسوخی سے متعلق کوئی اقدام نہیں اٹھایا ہے؛ تو ہم 23 فروری کو سیف گارڈز سے پرے جوہری سرگرمیوں کی نگرانی کا خاتمہ ہوگا۔

صالحی نے کہا کہ تا ہم گروسی سے ملاقات کے دوران، دونوں فریقین کے درمیان تعاون پر تبادلہ خیال ہوگا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ عالمی جوہری ادارے کے سربراہ نے صالحی سمیت ایرانی وزیر خارجہ "محمد جواد ظریف" سے ملاقات کریں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 12 =