کیوبا اور روس میں تیار کردہ کورونا ویکسین ایران میں تیار ہوں گی

ہمدان، ارنا- ایرانی محکمہ صحت کی خاتون ترجمان نے کیوبا اور روس میں تیار کردہ کورونا ویکسین کی ملک میں تیاری سے متعلق معلومات کی منتقلی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ان ویکسینوں کو ملک میں تیار کرنے کا عمل جاری ہے۔

ان خیالات کا اظہار "سمیہ سادات لاری" نے بدھ کے روز ہمدان میں طالب علموں سے ایک اجلاس کے بعد ارنا نمائندے سے انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسپوٹنک وی ویکسین کی پہلی کھیپ ایران پہنچ چکی ہے اور اب طبی ٹیموں کی ویکسینیشن کا عمل جاری ہے اس کے ساتھ ساتھ اس ویکسین کو ملک کے اندر تیار کرنے کی معلومات کی منتقلی بھی ہوئی ہے۔

لاری کا کہنا ہے کہ روسی ویکسین کے علاوہ کیوبا میں تیار کردہ ویکسین کی تیاری کی معلومات کی منتقلی بھی ہونے جار رہی ہے۔

انہوں نے ایرانی ساختہ کورونا ویسکین بشمول "برکت" نامی ویکسین کے عمل کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اس ویکسین کے پہلے کلینکل مرحلے کی دستاویزات کو محکمہ برائے خوراک اور ادویات کو پیش کیا گیا ہے اور ان کی منظوری کے بعد وہ دوسرے کلینکل مرحلے میں داخل ہوگی۔

ایرانی محکمہ صحت کی خاتون ترجمان نے کہا کہ اب تک 10 ہزار افراد کی ویکسینیشن ہوگئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ 24 گنٹھوں کے دوران، ملک میں مجموعی طور پر کورونا وائرس کا شکار 67 افراد جاں بحق ہوگئے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 0 =