اگر دوسری طرف عمل کرے تو ہم بھی عمل کریں گے؛باتوں کا کوئی فائدہ نہیں ہے

تہران، ارنا – ایرانی سپریم لیڈر نے جوہری معاہدے کے بارے میں فرمایا کہ" باتوں اور وعدوں کا کوئی فائدہ نہیں ہے؛ اس بار صرف عملی اقدام، اگر دوسری طرف عمل کرے تو ہم بھی عمل کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے آج بروز بدھ  ۲۹ بہمن سنہ ۱۳۵۶ ہجری شمسی مطابق ۱۸ فروری ۱۹۷۸ کو ایران کے شہر تبریز میں ہونے والے یادگار عوامی قیام کی سالگرہ کے موقع پر ایک ویڈیو کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے بہت سارے اچھے الفاظ اور وعدے سنے ہیں جن کی خلاف ورزی کی گئی ہے اور عملی طور پر ان کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔

ایرانی سپریم لیڈر نے اپنی تقریر کے ایک اور حصے میں کہا کہ ایرانی قوم کی خصوصیات  بشمول ایثار، بہادری، امیدواری کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایرانی عوام نے 22 بہمن ( ایرانی انقلاب کی سالگرہ) اور جنرل سلیمانی کے جنازے کی تقریب میں بھرپور شرکت کی۔

ایرانی عوام تھگ نہیں گئے ہیں اس کی ایک واضح مثال 22 بہمن ( انقلاب کی 42 ویں سالگرہ) میں تھی جو کورونا کی شرائط میں ایرانی عوام نے پرجوش شرکت  کے ساتھ اس دن کی تقریب کو منایا۔

رہبر انقلاب نے ایرانی نظام کی کامیابیوں کے ساتھ ساتھ کچھ کمزوریاں اور ناکامیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم سب کا فرض ہے کہ ہم سب کا فرض ہے کہ کامیابیوں کے ساتھ اپنی ناکامیوں اور کمزوریوں کا ازالہ کریں۔ جبکہ دشمن چاہتا ہے کہ ہم اپنی کامیابیوں کو نظر انداز اور کمزویوں کو مدنظر رکھنے کے ساتھ انقلاب کے راستے کو ترک کریں ۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha