17 فروری، 2021 10:32 AM
Journalist ID: 2393
News Code: 84232595
0 Persons
یورپ اور ایران اقتصادی فورم تجارت کا ایک حقیقی موقع ہے

لندن، ارنا - بین الاقوامی اقتصادی انسٹی ٹیوٹ  کے ڈائریکٹر جنرل برائے مشرق وسطی نے تین روزہ یوروپی ایرانی اقتصادی کانفرنس کو دوطرفہ تجارتی صلاحیتوں کو مستحکم کرنے اور ایران کی غیر تیل برآمدات کو بڑھانے کا ایک حقیقی موقع قرار دیا۔

 یہ بات لوکا میرالیا نے بدھ کے روز ارنا کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے اس کانفرنس کے لئے چار خصوصیات کا ذکر کیا جن میں سے پہلی  کورونا سے پیدا ہونے والے مسائل پر قابو پانا ہے جو ان کے بقول گزشتہ ایک سال کے دوران بین الاقوامی تعاون کے خاتمے کا باعث ہوا ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ اس اجلاس کا انعقاد پچھلے سال کے دوران تجارت میں عائد ہونے والی بندش کے خاتمے کی علامت ہے۔

انہوں نے یوروپی یونین کے بین الاقوامی تجارتی مرکز، ایران کی تجارتی ترقیاتی تنظیم  کی مالی حمایت اور ایرانی وزارت خارجہ کے سیاسی نمائندوں کی موجودگی کو اس اجلاس کی دیگر اہم خصوصیات کے طور پر ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس نشست میں بھی یورپی یونین کے ممبر ممالک ، برطانیہ اور سوئٹزرلینڈ اور دنیا کے 15 ممالک نے وسیع پیمانے پر شرکت کی ۔

همایش اقتصادی اروپا و ایران که آذرماه گذشته بنا به دلایل سیاسی لغو شد، برای روزهای ۱۱، ۱۲ و ۱۳  اسفند ۱۳۹۹ بصورت مجازی برنامه ریزی شده است. بر اساس اعلام دبیر خانه همایش «محمد جواد ظریف» وزیر امور خارجه ایران و احتمالا «جوسپ بورل» مسئول سیاست خارجی اتحادیه اروپا سخنرانان اصلی این نشست خواهند بود.

یورپ اور ایران کی اقتصادی کانفرنس جو گذشتہ نومبر میں سیاسی وجوہات کی بناء پر منسوخ کردی گئی تھی، 1 سے 3 مارچ تک منعقد کی جائے گی۔ کانفرنس کے سکریٹریٹ کے مطابق ، ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف اور ممکنہ طور پر یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوسپ بوریل  اس کانفرنس میں تقریر کریں گے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha