ایران اور روس کی سمندری مشق ایرانی آرمی کی طاقت کی علامت ہے

تہران، ارنا - ایرانی آرمی کے ڈپٹی کوآرڈینٹر نے کہا ہے کہ ، بحر ہند کے شمال میں ایران اور روس کے درمیان مشترکہ سمندری مشقیں ایرانی طاقت کی علامت ہے۔

ان خیالات کا اظہار ایڈمیرل "حبیب اللہ سیاری" نے اتوار کے روز حالیہ ایران اور روس کی دوسری سمندری مشق کے بارے میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس مشق کے انعقاد کا مقصد بحر ہند کے شمال میں سیکیورٹی قائم کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب طاقتور روسی بحریہ اسلامی جمہوریہ کی فوج اور سپاہ پاسداران اسلامی کے ساتھ مشق کرتی ہے ایک واضح پیغام کا حامل ہے۔

سیاری نے کہا کہ دشمنوں کے منصوبوں کی ناکامی کی وجہ اسلامی جمہوریہ ایران کے  کی طاقت اور مسلح افواج کا دفاعی ڈیٹرنس ہے  اسی لیے ہمیں اس صلاحیت کو فروغ دینے کی کوشش کرنی چاہیے۔

ایران، روس اور چین کے درمیان پہلی مشترکہ سمندری مشق کا 27 دسمبر 2019 کو  بحیرہ عمان کے پانیوں میں چار دن تک جاری تھی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha