اسلام قلعہ کسٹم کی حالیہ آتشزدگی سے متعلق افغان حکام سے رابطے میں ہیں: ایران

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے افغانستان کے سرحدی علاقے میں واقع اسلام قلعہ کسٹم کی آتشزدگی کا مقابلہ کرنے کیلئے ایرانی اقدامات کی وضاحت کی۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اس حادثے میں زخمی ہونے والوں کی مدد پر تعمیری حکمت عملی اپنایا ہے اور دونوں ملکوں کے حکام اس حوالے سے رابطے میں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق، افغانستان کے سرحدی علاقے اسلام قلعہ کے احاطے میں ایک گیس کے ٹینک کے دھماکے کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر آتشزدگی کے بعد افغانستان کے صوبے ہرات کے گورنر جنرل نے ایرانی صوبے خراسان رضوی کے گورنر جنرل سے ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران، ان سے امداد کی درخواست کی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس ٹیلی فونک رابطے کے فورا بعدا، آگ میں پھنسے لوگوں اور گاڑیوں کو مزید سہولیات کی فراہمی کے لئے ابتدائی اقدامات اٹھائے گئے اور ہرات میں اسلامی جمہوریہ ایران کے قونصل جنرل نے، گورنر سمیت صوبائی عہدیداروں سے رابطوں کےدوران، اس حادثے کے تمام پہلووں کا جائزہ لیا۔

خطیب زادہ نے کہا کہ وزارت خارجہ، بارڈر پروٹیکشن اور دیگر متعلقہ ایجنسیوں کے تعاون سے اسلام قلعہ- دوغاروں بارڈر کو ٹرک، کاروں اور لوگوں کے لئے کھلا رکھا گیا تھا جو اس آگ سے بچنے کیلئے ایرانی سرحد کی طرف بھاگ گئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اس حادثے میں زخمی ہونے والوں کی مدد پر تعمیری حکمت عملی اپنایا ہے اور دونوں ملکوں کے حکام اس حوالے سے رابطے میں ہیں۔

ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ اس حادثے میں زخمی ہونے والوں سے متعلق کوئی حتمی رپورت موصول نہیں ہوئی ہے، نیز اس علاقے میں رہائش پذیر ایرانی شہریوں پر ممکنہ جانی نقصان پہنچنے سے متعلق بھی کوئی حتمی معلومات دستیاب نہیں ہیں۔

واضح رہے کہ افغانستان کے سرحدی علاقے اسلام قلعہ میں حالیہ دھماکے کے نتیجے میں کم از کم 50 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں اور دسیوں ٹرکوں بھی تباہ ہوگئے ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha