ابھی تک نئی امریکی انتظامیہ کی خیر سگالی نہیں دیکھی گئی ہے: ایرانی صدر

تہران، ارنا – ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ ابھی تک نئی امریکی انتظامیہ کی خیر سگالی نہیں دیکھی گئی ہے اور اگر یہ حکومت اپنے نعروں پر سچی ہے تو اسے فوری طور پر ایک نیا راستہ شروع اور مسائل کا مقابلہ کرنا چاہئے۔

صدر حسن روحانی نے کرونا ویکیسین کی فراہمی کے لئے مالی اور کرنسی کی سخت شرائط کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یقینا ہمارے پاس موجود تمام پریشانیوں کے باوجود ہم کرنسی مہیا کرنے میں کامیاب ہوگئے، وائٹ ہاؤس میں ایک مجرم تھا جو بینکوں میں پیسہ گردش کرنے کی اجازت نہیں دیتا تھا اور ہفتوں سے ہم ایک بینک سے دوسرے بینک میں رقم منتقل کرنے میں مصروف تھے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے ابھی بھی امریکی نئی حکومت میں نئے اور اچھے کام نہیں دیکھے ، شاید ان کی باتیں بدلی ہوں لیکن عمل کرنا اہم ہے ، لہذا ہمیں عمل میں دیکھنا ہوگا کہ وہ کیا کررہے ہیں اور وہ اس جرم کی تلافی کیسے کررہے ہیں۔
انہوں نے سابق امریکی صدر ٹرمپ کے جرائم کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایک عظیم دہشت گرد کو ملک اور دنیا میں ہٹا کر بدنام کیا گیا ہے۔ اس نئی حکومت کو ان جرائم کی تلافی کرنے کے طریق کار پر سوچنا چاہئے لہذا سب سے پہلے اسے لازمی طور پر اس راستے سے واپس کرنا چاہئے ، کیونکہ پتہ چلا کہ یہ راستہ غلط تھا اور ناکام تھا۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ کسی کو بھی شبہ نہیں ہے کہ ایرانی عوام پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ناکام ہوگیا ہے اور ایرانی قوم کے خلاف معاشی جنگ ناکام ہوچکی ہے البتہ ہمارے عوام میں ابھی تک پریشانیوں کا سامنا ہے اسی لئے ہم کہتے ہیں کہ نئی امریکی انتظامیہ ، اگر یہ اپنے نعروں میں سچی ہے تو ، اسے فوری طور پر اپنا راستہ تبدیل ک اور ایک آغاز کرنا ہوگا۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha