ایرانی فضائی حدود امریکی لڑاکا طیاروں کیلئے محفوظ نہیں ہے

تہران، ارنا- ایرانی وزیر انٹلیجنس کہا ہے کہ دشمن عناصر ہمارے ملک کی سلامتی کو خطرے کا شکار کرنے کے درپے ہیں حالانکہ اسلامی جمہوریہ ایران بالکل محفوظ دور میں ہے۔

ان خیالات کا اظہار "سید محمود علوی" نے پیر کی رات، ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کا ایران پر فوجی حملہ کرنے کا سنجیدہ منصوبہ تھا اور وہ اس طریقے سے ایران کیخلاف معاشی جنگ میں اپنی شکست کا ازالہ کرنا چاہتا تھا؛ لیکن ہماری مسلح افواج کی طاقت کے مظاہرے نے انہیں اپنی کارروائیوں پر شک و شبہ کا شکار کیا۔

علوی نے کہا کہ اگر ان کے لڑاکا طیارے کسی بھی ملک کے ہوائی اڈے سے اڑان بھرتے تو ہم اس ملک کے ہوائی اڈے اور تنصیبات کو تباہ کر دیتے تھے لہذا اس نے کسی ملک کے ہوائی اڈے کا استعمال نہیں کرسکا۔

انہوں نے کہا کہ امریکیوں کو ان کے جدیدترین ڈرون کو مارگرانے سے پتہ چلا کہ ایرانی فضائی حدود ان کے لڑاکا طیاروں کیلئے محفوظ نہیں ہے۔

 انہوں نے کہا کہ امریکیوں کا خیال تھا کہ وہ بحر ہند میں جاکر ہماری نظر سے غائب ہوسکتے ہیں لیکن جب پاسداران اسلامی انقلاب کی مشق میں 1800 کلومیٹر کے فاصلے سے دور ہدف کو میزائل کا نشانہ بناکر تباہ کیا گیا تو ان کو پتہ ہوگا کہ وہ ہماری سرزمین کیخلاف جارحیت نہیں کرسکتے۔ 

علوی نے کہا کہ اب وہی ممالک جنھوں نے امریکیوں کو ایران کی مخالفت کرنے کا مشورہ دیا تھا وہ اب امریکیوں کو ایران کیساتھ مذاکرات کرنے کا مشورہ دے رہے ہیں اور یہ ہماری مسلح افواج کی طاقت کا نتیجہ ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha