ایرانی سپریم لیڈر کا روسی حکومت کو پیغام؛ تعلقات کی مضبوطی پر زور

ماسکو، ارنا- روس کے دورے پر آئے ہوئے ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ دورہ ماسکو کا اہم مقصد پیوٹین کے نام پر سپریم لیڈر کے پیغام کو روسی حکومت کا حوالہ کرنا ہے، جس میں باہمی اسٹریٹجک تعلقات کی مضبوطی پر زور دیا گیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد باقر قالیباف" نے روس کے چیئرمین آف اسٹیٹ ڈوما "ویچسلا والودین" سے ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس پیغام میں ایران اور روس کے مابین اسٹریٹجک تعلقات کی مضبوطی اور تسلسل پر زور دیا گیا ہے اور دنیا میں کوئی سیاسی تبدیلی اور یکطرفہ نظریہ اس تعلقات کو متاثر نہیں کرے گا۔

قالیباف نے کہا کہ آج کی میٹنگ میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ بہار میں، تہران میں ایرانی اور روسی تاجروں کے مابین اقتصادی اور تجارتی نمائش کے انعقاد بعد ، ایران اور روسی پارلیمانوں کا تیسرا مشترکہ ہائی کمیشن منعقد ہوگا اور ہم روسی اسپیکر کی میزبانی کریں گے۔

ایرانی اسپیکر نے دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعلقات کے فروغ کی اہمیت پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ تہران اور ماسکو کا علاقائی اور عالمی سلامتی اور امن اور دونوں ممالک کیخلاف جابرانہ پابندیوں کیخلاف جنگ سے متعلق مشترکہ موقف ہے۔

قالیباف نے اس امید کا اظہار کردیا کہ ان کا حالیہ دورہ روس، دونوں ممالک کے مابین سیاسی، معاشی، سائنسی اور ثقافتی مباحثوں میں ایک نئی پیشرفت کا آغاز ہوگا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha