ایرانی اسپیکر اسٹریٹجک تعلقات کے میدان میں ایک اہم پیغام لے کر روسی حکام سے ملنے جار رہے ہیں

تہران، ارنا- ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے پارلیمانی تعلقات کے فروغ کو روس اور ایران کے تعلقات کی مزید گہرائی کا باعث قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایرانی سپریم لیڈر نے بدستور روس سے اسٹریٹجک تعلقات پر زور دیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد باقر قالیباف" نے دورہ روس کی روانگی سے پہلے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ روسی ڈوما کے چیئرمین کی باضابطہ دعوت سے ماسکو کے دورے پر جارہے ہیں۔

قالیباف نے مزید کہا کہ ایرانی سپریم لیڈر نے بدستور روس سے اسٹریٹجک تعلقات پر زور دیا ہے اور اسی وجہ سے میں روسی عہدیداروں کی باضباطہ دعوت سے اسٹریٹجک تعلقات کے میدان میں ایک اہم پیغام لے کر روسی حکام سے ملنے جا رہا ہوں۔

انہوں نے مختلف شعبوں بشمول سیاسی، اقتصادی، دفاعی، سلامتی، سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں ایران ار روس کے تعلقات کو اچھے اور تعمیری قرار دے دیا اور کہا کہ دونوں ممالک کی پارلیمنٹ کے درمیان باہمی تعلقات، خاص طور پر جوائنٹ ہائی کمیشن جو پارلیمنٹ کے دونوں اسپیکر کی زیرصدارت ہے، نے تعلقات کو مزید گہرا کیا ہے۔

قالیباف نے کہا کہ علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر دونوں ملکوں کے درمیان بہت سارے مشترکات ہیں؛ یہ مشترکات ہمیں خطے اور دنیا میں موجودہ مواقع سے فائدہ اٹھانے اور دونوں ملکوں اور علاقے کے مفادات کے پیش نظر مشترکہ منصوبوں کے فریم ورک میں عالمی امن منصوبے کی طرف گامزن ہونے کے قابل بنا دیتی ہیں۔

انہوں نے کہا وہ روسی ڈوما اور سینٹ کے اسپیکروں سمیت دیگر روسی عہدیداروں سے ملاقاتیں کریں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha