ایرانی سائنسدان دنیا کے 2 فیصد سائنسی مضامین کو تیار کرتے ہیں

بوشہر، ارنا- نائب ایرانی وزیر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی نے کہا ہے کہ اگرچہ ایران کی دنیا کی آبادی کا ایک فیصد حصہ ہے، لیکن دنیا کے 2 فیصد مستند سائنسی مضامین کو ہمارے ملک کے سائنسدانوں اور محققین تیار کرتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "غلامحسین رحیمی شعرباف" نے جمعہ کے روز ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران سالانہ 65 ہزار سائنسی دستاویزات کو معتبر بین الاقوامی ڈیٹا بیس میں رجسٹر کرتا ہے اور اب ایران کو سائنسی مضامین کی تیاری کی تعداد کے لحاظ سے دنیا کی 15 ویں پوزیشن حاصل ہے۔

رحیمی شعرباف نے کہا کہ گزشتہ سال کے دوران، ایران، مضامین کے معیار کی تیاری کے لحاظ سے دنیا کی 14 ویں پوزیشن پر کھڑا رہا۔

انہوں نے ایران میں علم پر مبنی کمپینیوں کی ترقی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وزارت سائنس اور ٹیکنالوجی کے تعاون سے گزشتہ 3 سالوں کے دوران، علم پر مبنی کمپینوں نے معیار کے لحاظ سے قابل قدر ترقی کی ہے۔

نائب ایرانی وزیر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی نے کہا کہ فی الحال ملک کے اندر 5 ہزار 700 علم پر مبنی کمپنیاں سرگرم عمل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک اب اس مقام پر پہنچا ہے جہاں اسے علم پر مبنی کمپنی کی پیدائش کے لئے جدوجہد کرنا پڑی ہے اور اب چھوٹی علم پر مبنی کمپنیاں حکومت کی حمایت سے بڑی کمپینوں میں تبدیل ہوگئی ہیں جو انتہائی قابل قدر ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha