عالمی عدالت انصاف کے فیصلے نے ایرانی قوم کی طاقت کا مظاہرہ کیا: صدر روحانی

تہران، ارنا- ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ عالمی عدالت انصاف کے فیصلے نے امریکی جیسی سپرپاور کے سامنے ایرانی عظیم قوم کی طاقت کا مظاہرہ کیا۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے جمعرات کے روز، وزارت صنعت، تجارت اور کان کنی کے زیر اہتمام میں منصوبوں کی افتتاحی تقریب کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے عالمی عدالت انصاف میں ایران کیجانب سے امریکہ کیخلاف مقدمہ چلانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اکرچہ دشمن عناصر ایران کو چیلنچوں کا شکار کرنے کی کوشش کر رہے تھے لیکن ہمارے پاس خوشخبری ہے جو ہمارے سب کیلئے انتہائی اہم اور قابل قدر ہے۔

صدر روحانی نے موجودہ حکومت کے دوران، عالمی عدالت انصاف میں کئی بار امریکہ کو شکست کا سامنا کرنے پر تبصرہ کرتے ہوئے اس فتح پر ایرانی عوام کو مبارکباد پیش کی۔

ایرانی صدر نے کہا کہ یہ کسی سپر پاور کے سامنے ایرانی عظیم قوم کی طاقت کا مظاہرہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی جنگ میں، کروڑوں ماہرین ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ہم ایک محدود تعداد سفارت کاروں کیساتھ جنگ ​​میں جارہے ہیں؛ ہماری یہ چھوٹی سی تعداد کی فتح ان کی بڑی تعداد کے مقابلے میں بہت خوبصورت ہے۔

واضح رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے بھی گزشتہ روز کے دوران کہا کہ بین الاقوامی عدالت انصاف (آئی سی جے) نے اب ایران کیخلاف غیر قانونی پابندیوں کے معاملے پر امریکہ کے ابتدائی اعتراض پر تمام دلائل کو مسترد کردیا ہے؛ یہ 3 اکتوبر 2018 کے فیصلے کے بعد ایران کیلئے ایک اور قانونی فتح ہے۔

ظریف نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے بدستور بین الاقوامی قوانین کا احترام کیا ہے اور اب امریکہ کیجانب سے اپنے بین الاقوامی وعدوں پر قائم رہنے کا وقت آگیا ہے۔

واضح رہے کہ نیدرلینڈز میں قائم ایرانی سفارتخانے کے مطابق، بین الاقوامی عدالت انصاف (آئی سی جے) نے 1334 کنونشن کی خلاف ورزی کے معاملے پر امریکہ کے ابتدائی اعتراضات کو واضح طور پر مسترد کردیا اور اس کنونشن کے تحت ایرانی شہریوں، کمپنیوں اور حکومت سے متعلق امریکی ذمہ داریوں کی خلاف ورزیوں کو دور کرنے کے لئے اپنی اہلیت کا اعلان کیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha