صوبے مازندارن میں کیویار کی برآمدات میں 15 فیصد کا اضافہ

ساری، ارنا- ایرانی شمالی صوبے مازندران کی فشریز تنظیم کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ رواں سال کے دوران، اس صوبے میں کیویار اور اسٹرجن گوشت کی برآمدات میں 15 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "حسن اسحاقی" نے جمعرات کے روز بابلسر میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران، ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ رواں سال کے دوران، مازندارن میں ایک ہزار 29 کلوگرام کیویار کو بیرون ملک میں برآمدات کیا گیا ہے جن کی مالیت کی شرح 532 ہزار ڈالر سے زائد ہے۔

اسحاقی نے کہا کہ برطانیہ، قطر، آذربائیجان، روس اور متحدہ عرب امارات، صوبے مازندران کے کیویار کی برآمدات کی پہلی منزلیں ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ مجموعی طور پر ماہی گیری مصنوعات کی برامدات میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 37 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے لیکن کوورنا وبا کے پھیلاؤ کے باعث اور بعض ملکوں میں برآمدات پر پابندی کی وجہ سے ماہی گیری مصنوعات کی برامدات میں کمی آئی۔

واضح رہے کہ صوبے مازندران میں گزشتہ سال کے دوران، 11 ہزار 240 ٹن مختلف قسم فیشری پروڈکٹ کو بیرون ملک میں برآمد کیا گیا جن کی مالیت مجموعی شرح 35 ملین 876 ہزار ڈالر ہے اور اس میں گزشتہ دوسال کے مقابلے میں وزن کے لحاظ سے 60 فیصد اور مالیت کے لحاظ سے 21 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha