شمخانی کی عراق کے ذریعہ ٹرمپ اور پومپیو کی گرفتاری کے حکم کی تعریف

 تہران، ارنا - ایرانی قومی سلامتی کے اعلی سیکریٹری جنرل نے عراقی عدلیہ کی جانب سے "ڈونلڈ ٹرمپ" اور "مائک پومپیو" کے وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی کارروائی کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں" ابو مہدی مہندس "اور" قاسم سلیمانی کے شہدا کے خون کو پامال کرنے کی اجازت نہیں دینی چاہئےاور ہمیں ان دہشتگردانہ جرائم کا ارتکاب کرنے والوں کو کیفر کردار تک پہنچانا چاہیے۔

یہ بات ایڈمیرل علی شمخانی نے آج بروز بدھ ایران کے دورے پر آئے ہوئے عراقی وزیر خارجہ 'فواد حسین' کے ساتھ ایک ملاقات میں کہی۔

انہوں نے عراقی عدلیہ کی جانب سے ٹرمپ اور پومپیو کی گرفتاری کے جاری کردہ حکم کو سراہتے ہوئے کہا کا ایسی دہشتگردی کارروائیوں کے کے مرتکب افراد کو سخت سے سخت سزا دی جانی چاہئے

انہوں نے مختلف شعبوں میں دونوں ممالک کے مابین اچھے تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے مختلف شعبوں میں مشترکہ معاہدوں پر مکمل عمل درآمد کو تیز کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

انہوں نے عراق اور ایران کی سلامتی ، استحکام اور سکون کو ایک دوسرے کے لازم  و ملزوم قرار دیتے ہوئے  کہا کہ عراق میں امن، طاقت اور خودمختاری کا فروغ سیاسی ، معاشی اور سلامتی مسائل پر قابو پانے کے لئے لازمی ہے۔

شمخانی نے مزید کہاکہ خطے میں عدم استحکام اور بحران کی بنیادی وجہ غیر ملکی افواج خصوصا امریکی افواج کی بری موجودگی ہے۔

اس موقع میں فواد حسین نے خطے میں استحکام اور سلامتی کو برقرار رکھنے میں اسلامی جمہوریہ ایران کے نمایان کردار کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایران کے ساتھ مشترکہ معاشی منصوبوں پر عمل درآمد کو تیز کرنا  اور تمام شعبوں میں تعاون بڑھانا عراقی خارجہ پالیسی کی ایک بنیادی ترجیح ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عراقی عوام اور حکومت عراق میں داعش کے دہشت گردی گروپ کے خاتمے میں ایرانی بھائیوں کی مدد اور امداد کو کبھی نہیں بھولیں گے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha