چابہار پورٹ ایران اور بھارت کے تعلقات کو فروغ دیتی ہے

چابہار، ارنا- بھارتی محکمہ خارجہ کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ چابہار پورٹ، ایران اور بھارت کے درمیان پُل کا کردار ادا کرنے سمیت، سیاسی، اقتصادی اور تجارتی شعبوں میں باہمی تعلقات کو فروغ دیتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار ایران کے دورے پر آئے ہوئے "جیتندر پال سنگھ" نے اتوار کے روز چابہار بندرگاہ میں واقع شہید بہشتی پورٹ کی صلاحیتوں کو بڑھانے اور اسے مزید سہولیات فراہم کرنے سے متعلق منعقدہ ایک اجلاس کے دوران، گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ حالیہ سالوں کے دوران، چابہار پورٹ کے ذریعے بھارت کیجانب سے افغانستان کو امداد کے طورپر 75 ٹن گندم بھیجا گیا ہے جو انتہائی قابل قدر ہے۔

انہوں نے کہا کہ چابہار پورٹ کی ترقی کیلئے تعمیری اقدامات اٹھائے گئے ہیں اور اس کی مشترکہ استعمال کا جائزہ لیا گیا ہے اور بھارت کے علاوہ  بہت سارے ملکوں نے اسی بندرگاہ میں سرمایہ کاری کرنے میں دلچسبی کا اظہار کرلیا ہے۔

بھارتی محکمہ خارجہ کے ڈائریکٹر جنرل نے مزید کہا کہ اسی وجہ سے ہم نے چابہار پورٹ کو پابندیوں سے استثنی دینے کی کوشش کی اور ہم چابہار کے ذریعے افغانستان کی امداد و نیز اسی بندرگارہ میں دیگر ممالک کی موجودگی پر خوش ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کے ذریعے 2 کرینیں کی فراہمی اور ان کی چابہار بندرگاہ میں آمد، بڑی خوشی کی بات ہے جس سے ان لوڈنگ اور لوڈنگ کے کچھ مسائل کو حل کیا جا سکتا ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی کمپنی آئی پی جی ایل کی چابہار بندرگاہ میں پہلی سرمایہ کاری کا، آج بروز اتوار کو چابہار کے ان لوڈنگ اور لوڈنگ کے چکر میں دو کرینیں کی آمد کیساتھ کیا گیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha