ظریف نے قفقاز میں قیام امن کیلیے ایران کا موقف کی وضاحت کی

تہران، ارنا -  ایرانی وزیر خارجہ نے علاقے قفقاز میں امن کو برقرار رکھنے کے لئے ایرانی موقف کی وضاحت کی۔

یہ بات محمد جواد ظریف جنہوں نے ترکی کے دورے پر ہے، جمعہ کے روز  اپنے ترک ہم منصب کے ساتھ ایک ملاقات میں کہی۔

انہوں نے ناگورا-کاراباخ  کے علاقے میں قیام امن کے لیے ایرانی نقطہ نظر پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس علاقے میں امن و استحکام برقرار رکھنے کے لئے باہمی تعلقات خاص طور پر اقتصادی تعلقات کے فروغ پر زور دیا.

فریقین نے اس ملاقات میں باہمی تعلقات کے علاوہ علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔

ظریف نے ایران اور ترکی کے عوام کے لئے مشترکہ مفادات اور دونوں ممالک کے تعلقات کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے  ٹرانزٹ ، تجارت ، توانائی کے شعبے میں باہمی تعاون کے فروغ کے ساتھ ساتھ کمپنیوں اور سرگرم اقتصادی کارکنوں  کے مسائل کو حل کرنے کے لئے باہمی کوششوں پر تبادلہ خیال کیا۔

انہوں نے علاقے قفقاز میں امن کو برقرار رکھنے کے لئے ایرانی موقف کی وضاحت کی۔

ترک وزریر خارجہ نے دونوں ممالک کے تعلقات کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے ٹرانزٹ، نقل و حمل، تجارت اور توانائی کے شعبوں  میں دونوں ممالک کے درمیان معاہدوں کے نفاذ پر زور دیا۔

اوغلو نے آئندہ میں تہران میں منعقدہ ترکی اور ایران کے درمیان مشترکہ اقتصادی کمیشن کا آٹھواں دور کے انعقاد کا حوالہ دیا۔

قابل ذکر ہے کہ ظریف نے اس سے پہلے ترک صدر رجب طیب اردوغان کے ساتھ ملاقات کی۔

واضح رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے علاقائی دورے میں باکو اور ماسکو کا دورہ کیا ہے اور وہ آرمینیا کے دورے کے اختتام کے بعد تبلیسی کے دورے پر روانہ ہوگئے۔

اس کے علاوہ ایرانی وزیر خارجہ نے آج بروز جمعہ ترک حکام سے مذاکرات کیلئے انقرہ کا دورہ کیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha