علاقائی سلامتی پر صرف علاقائی ممالک ہی سے مذاکرات کریں گے: عراقچی

تہران، ارنا- نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور نے کہا ہے کہ ایران، جوہری معاہدے کے نفاذ کے طریقوں کے بغیر دوسرے کسی موضوعات پر 1+5 ممالک سے مذاکرات نہیں کرے گا اور ہم خلیج فارس علاقے کی سلامتی کی صورتحال سے متعلق صرف اور صرف خطی ممالک اور غیر خطی ملکوں کی عدم مداخلت پر مذاکرات کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار کویت کے دورے پر آئے ہوئے "سید عباس عراقچی" نے آج بروز منگل کو کویتی وزیر خارجہ "شیخ احمد ناصر المحمد الصباح" سے ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے خلیج فارس ممالک کے درمیان، امن برقرار رکھنے کیلئے کویت کی کوششوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اجتماعی سلامتی کے حصول میں مذاکرات اور غیر خطی ممالک کی عدم مداخلت کی اہمیت پر زور دیا۔

عراقچی نے دونوں ملکوں کے درمیان باہمی اور علاقائی شعبوں میں مشاورت کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور دیتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک کویت سے تعلقات کی مضبوطی کیلئے پختہ عزم رکھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ علاقے میں بے پناہ صلاحیتوں کے پیش نظر، خطی ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون سے علاقے کا مستقبل روشن ہوگا۔

عراقچی نے کہا کہ علاقے میں امن اور سلامتی کا قیام صرف خطی ممالک کے ذریعے اور غیر خطی ملکوں کی عدم مداخلت سے ممکن ہوگا۔

نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور نے کہا ہے کہ ایران، جوہری معاہدے کے نفاذ کے طریقوں کے بغیر دوسرے کسی موضوعات پر 1+5 ممالک سے مذاکرات نہیں کرے گا اور ہم خلیج فارس علاقے کی سلامتی کی صورتحال سے متعلق صرف اور صرف خطی ممالک اور غیر خطی ملکوں کی عدم مداخلت پر مذاکرات کریں گے۔

اس موقع پر کویتی وزیر خارجہ نے بھی باہمی مشاورت کا سلسلہ جاری رکھنے کا خیر مقدم کرتے ہوئے خطی ممالک کے درمیان مذاکرات کو اختلافات کے حل کا واحد راستہ قرار دے دیا۔

انہوں نے مختلف شعبوں میں ایران اور کویت کے درمیان تعلقات کے فروغ میں دلچسبی کا اظہار کرلیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha