گیند امریکی کورٹ میں/ ہمیں واشنگٹن سے مذاکرات کی کوئی جلدی نہیں ہے: ایرانی مندوب

تہران، ارنا - اقوام متحدہ میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر اور مستقل نمائندے نے کہا ہے کہ اب گیند امریکی کورٹ میں ہے اور اب یہ واشنگٹن ہے کہ امریکی سابق انتظامیہ کی دیوالیہ پالیسی کو جاری رکھنے یا جاری نہ رکھنے کا فیصلہ کرنا چاہیے۔

یہ بات تخت روانچی نے منگل کے روز  امریکی ٹی وی چینل این بی سی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اب گیند امریکی کورٹ میں ہے اور اب واشنگٹن کو امریکی سابق انتظامیہ کی دیوالیہ پالیسی کو جاری رکھنے یا جاری نہ رکھنے کا فیصلہ کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ یہ امریکہ تھا جس نے ٹرمپ انتظامیہ کے ماتحت 2018 میں مذاکرات کی میز کو چھوڑا ۔ اب یہ واشنگٹن کہ فیصلہ  کرے کہ کیا وہ اپنی سابقہ ​​انتظامیہ کی دیوالیہ پالیسی کو جاری رکھنا چاہتا ہے یا وہ نیا صفحہ کھولنا چاہتا ہے۔

تخت روانچی نے کہا کہ ایران نے بار بار کہا ہے  کہ اگر دیگر فریقین اپنی ذمہ داریوں کو پورا کریں تو ایران بھی اپنی پوری ذمہ داریوں پر واپس آجائے گا۔

تخت روانچی نے بتایا کہ ایران کا بائیڈن کی نئی حکومت سے مذاکرات کا کوئی منصوبہ نہیں ہے اور وہ پابندیاں کے خاتمے اور سنہ 2015 کے جوہری معاہدے میں واپسی کے لئے امریکہ کے پہلے قدم کا انتظار کر رہا ہے۔
 

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha