بائیڈن کو ایران کیساتھ تعامل کا راستہ اپنانا ہوگا: پاکستانی اخبار کے سیکرٹری

اسلام آباد، ارنا – پاکستانی اخبار 'نوائے وقت' کے سکریٹری نے کہا ہے کہ ٹرمپ نے اپنے پوروورتیوں کے برعکس اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف جارجیت کے راستے کا انتخاب کیا لیکن جو بائیڈن جاں لیں کہ دباؤ کے آپشن کا کوئی نتیجہ نہیں ہے اور انہیں تہران کے ساتھ تعامل کرنے کا راستہ اپنانا ہوگا۔

یہ بات جاوید صدیق نے بدھ کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ امریکیوں کو یہ جان لینا چاہئے کہ ایران کے حوالے سے جبر و دباو کی پالیسی کامیاب نہیں ہوسکتی ہے اور انہیں بات چیت اور تعاون کے راستے کے ذریعہ مسائل کو حل کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ٹرمپ امریکہ کے پچھلے صدور کے مقابلے میں ایک مختلف نقطہ نظر اختیار کیا۔

صدیق نے کہا کہ نئی امریکی انتظامیہ کو اس حقیقت کو قبول کرنا ہوگا کہ ٹرمپ اور ان کے حلیفوں کی جارحانہ پالیسیاں یا ایران پر زیادہ سے زیادہ دباؤ کی پالیسی نتیجہ خیز نہیں ہوگی۔

انہوں نے نئے امریکی صدر جو بائیڈن کو سفارش کرتے ہیں پچھلی ​​انتظامیہ کی پالیسیوں کا تسلسل امریکہ کو بدنام کرے گا اور اس کے علاوہ دنیا کو ایک خطرناک پوزیشن میں ڈال دے گا۔

سینئر پاکستانی صحافی نے کہاکہ ٹرمپ نے مشرق وسطی میں افراتفری کی پالیسی پر عمل کیا اور اسی طریقے سے امریکی سیاسی صورتحال کو درہم برہم کردیا گیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURDU1

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha