ایران میں گزشتہ 9 مہینوں کے دوران 58 ملین ٹن مصنوعات کی برآمدات

تہران، ارنا- سنئیر نائب ایرانی صدر نے کہا ہے کہ پڑوسی ممالک، ایرانی مصنوعات کی برآمدات کی سب سے اہم اور بڑی منزلیں ہیں اور حکومت، تجارتی صورتحال میں بہتری آنے کیلئے کسی بھی کوشش اور حمایت سے دریغ نہیں کرے گی۔

ان خیالات کا اظہار "اسحاق جہانگیری" نے پیر کے روز سب سے بہترین برآمدکنند گان کی کوششوں کا شکریہ ادا کرنے سے متعلق منعقدہ 24 ویں تقریب کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ 9 مہینوں کے دوران، ایران اور دنیا کے مختلف ممالک کے درمیان 110 ملین ٹن مختلف قسم مصنوعات کی لین دین ہوئی ہے۔

جہانگیری نے کہا کہ امریکہ نے ایرانی بندرگاہوں، جہاز سازی اور ایرانی بحری جہازوں کو دوسرے ملکوں میں لنگر انداز ہونے کا بائیکاٹ کیا ہے؛ تا ہم گزشتہ 9 مہینوں کے دوران ملک میں 58 ملین ٹن مصنوعات کی برآمدات ہوئی ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ برآمد کنندگان نے اس عرصے کے دوران مطلوبہ کرنسی فراہم کرکے ملکی معیشت کا انتظام کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پڑوسی ممالک ایرانی مصنوعات کی برآمدات کی سب سے اہم اور بڑی منزلیں ہیں اور ہمیں علم پر مبنی کمپنیوں کی مصنوعات کی برآمدات میں اضافہ کرنا ہوگا کیونکہ گزشتہ 9 مہینوں کے دوران 25 ارب ڈالر کی برآمدات قابل قبول نہیں ہے۔

جہانگیری نے سرگرم اقتصادی کارکنوں سے درخواست دی کہ وہ تجارتی مسائل کے حل کیلئے اپنی تجاویز کو پیش کریں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ حکومت، تجارتی صورتحال بالخصوص برآمدات کے شعبے میں بہتری آنے کی کسی حمایت سے دریغ نہیں کرے گی۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 4 =