ایرانی ایٹمی تنظیم پابندیوں کی منسوخی سے متعلق قانون کو تکنیکی طور پر نافذ کرتی ہے

تہران، ارنا – ایرانی ایٹمی توانائی ادارے کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایرانی ایٹمی تنظیم پابندیوں کو ختم کرنے سے متعلق قانون کو تکنیکی طور پر  سو فیصد نافذ کررہی ہے۔

 یہ بات بہروز کمالوندی نے پیر کے روز ایرانی پارلیمنٹ میں کہی۔

انہوں نے پابندیوں کو ختم کرنے اور ایرانی قوم کے مفادات کے تحفظ سے متعلق ایرانی پارلیمنٹ کے ذریعہ منظور شدہ  قانون کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ جوہری توانائی کی تنظیم اس قانون کےتحت اپنے تکنیکی کام کو آگے بڑھاتی ہے اور ہم قانون کے تکنیکی امور پر عمل پیرا ہیں۔

کمالوندی نے کہا کہ دوسری فریقین کی جانب سے ذمہ داریوں پر عمل نہ کرنے کی صورت میں انسپکٹرز کے نکالنے سے متعلق کچھ بیانات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس قانون کے مطابق پابندیوں کے تسلسل کی صورت میں رضاکارانہ طور پر اضافی پروٹوکول پر عملدرآمد کو مقررہ وقت پر روک دیا جائے گا اور اس  سے مراد عالمی ایٹمی ایجنسی کے انسپکٹرز کا نکلنا، نہیں ہے۔

انہوں نے عالمی ایجنسی کے مختلف معائنوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ معائنہ کا ایک حصہ حفاظتی اقدامات ہیں اور دوسرا حصہ ایڈیشنل پروٹوکول کے مطابق ہے اور اضافی پروٹوکول پر عمل درآمد کے روکنے کی صورت میں اضافی پروٹوکول سے متعلق معائنے بند کردیئے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ جوہری توانائی تنظیم نے قانون کے مطابق 20 فیصد افزودگی کے قانون کو نافذ کیا ہے جو بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کو مطلع کیا گیاہے اور IR2M سنٹرفیوج کی تنصیب کا عمل آغاز ہوچکا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha