سلک روڈ کا ورثہ ای سی او ممالک کا مشترکہ منصوبہ ہونا ہوگا

تہران، ارنا- اسلامی ثقافت اور تعلقات کی تنظیم کے سربراہ نے کہا ہے کہ سلک روڈ کا ورثہ ای سی او ممالک کا مشترکہ منصوبہ ہونا ہوگا۔

ان خیالات کا اظہار "ابوذر ابراہیمی ترکمان" نے اتوار کے روز ایکو اقتصادی تعاون تنظیم اور اسلامی ثقافت اور تعلقات کی تنظیم کے درمیان مشترکہ بین الاقوامی تعاون کی توسیع اور ثقافتی تعلقات میں مضبوطی سے متعلق ایک مفاہمت کی یادشت پر دستخط کے موقع پر کیا۔

انہوں نے ان دونوں تنظیموں کے درمیان تعاون کی صلاحیتوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس مفاہتمی یادداشت کے فریم ورک کے اندر علاقائی سطح پر مشترکہ ثقافتی منصوبوں کا نفاذ ہوگا۔

ترکمان نے اس امید کا اظہار کرلیا کہ کورونا وبا کی وجہ سے رونما ہونے والی صورتحال اور پابندیوں کے باوجود، دونوں تنظیموں کے درمیان اچھا اور تعمیری تعاون ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ای سی او کے ممبر ممالک میں تعینات ایرانی ثقافتی قونصلروں کا تعاون بہت فائدہ مند ہوگا؛ اس بے حد صلاحیت کو نئے اور بین الاقوامی سطح پر ظاہر کرنے کیلئے مناسب فضا کی فراہمی کی ضرورت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ای سی او کے ممبر ممالک میں ثقافت ایک بہت اہم مسئلہ ہے اور ای سی او کے ممبر ممالک کے مابین بہت سی مماثلتیں ہیں، جس میں اسلامی جمہوریہ ایران کا ایک اہم حصہ ہے۔

ترکمان نے کہا کہ سلک روڈ ای سی او کے ممبر ممالک کے سب سے اہم مشترکہ منصوبوں میں سے ایک ہے؛ بہت سے ای سی او ممبر ممالک سلک روڈ کے ممبر ہیں، لہذا سلک روڈ کے ورثہ کو ای سی او کے ممبر ممالک کے مشترکہ منصوبوں میں سے ایک سمجھا جانا ہوگا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha