جنرل سلیمانی کی شہادت سے مستفید ہونے والا واحد فریق داعش ہی تھا: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ ایک ایسے وقت جب ہم شاندار طریقے اور بڑی عزت سے جنرل سلیمانی کی شہادت کی سالگرہ مناتے ہیں تو اس وقت اس بات کی یاد دہانی کرائی ہے کہ ان کی شہادت سے مستفید ہونے والا واحد فریق داعش ہی تھا۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز اتوار کو ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ سال کے دوران، ٹھیک اسی دن میں انتہاپسند دہشتگردوں کے سب سے بڑے دشمن کو دہشتگرد طاقت کے ہاتھوں میں قتل کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ایک ایسے وقت جب ہم شاندار طریقے اور بڑی عزت سے جنرل سلیمانی کی شہادت کی سالگرہ مناتے ہیں تو اس وقت اس بات کی یاد دہانی کرائی ہے کہ ان کی شہادت سے مستفید ہونے والا واحد فریق داعش ہی تھا۔

واضح رہے کہ 3 جنوری 2020 میں عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر "ابومهدی المهندس" شہید ہوگئے۔  

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 1 =