ایرانی فوٹوگرافر نے بین البراعظمی میلے میں سونے کا تمغہ جیت لیا

تہران، ارنا – ایرانی فوٹوگرافر "احمد خطیری" نے براعظم جرمنی ، جنوبی افریقہ اور انڈونیشیا کے درمیان میلے میں سونے کا تمغہ اپنے نام کرلیا۔

بین الاقوامی فیڈریشن آف فوٹوگرافی (FIAP) کے زیر اہتمام کانٹنےنٹس فوٹوگرافی فیسٹیول میں ایرانی فوٹوگرافر احمد خطیری نے طلائی تمغہ جیتا۔

خطیری ایرانی فوٹوگرافروں کی ایسوسی ایشن کے ایک باضابطہ رکن اور بین الاقوامی فیڈریشن آف فوٹوگرافی (ایف آئی اے پی) کے رکن ہیں۔

انہوں نے 2017 میں سربیا اور رومانیہ ، امریکہ اور چین کے فیسٹیول میں سونے کے تمغے سمیت کئی بین الاقوامی تصویری انعامات جیتنے کے ساتھ ساتھ 2020 فوٹوز اور متعدد دیگر بین الاقوامی میلوں کیلئے اٹلی کے فیسٹیول میں شامل افراد کی تعریف بھی کی ہے۔

ایف آئی اے بی کا مطلب بین الاقوامی فیڈریشن آف فوٹوگرافی ہے ، جو شوقیہ فوٹوگرافی کا سب سے بڑا بین الاقوامی کفیل ہے، 1946 میں سوئٹزرلینڈ میں قائم کیا گیا ، فیڈریشن فوٹو گرافی کے قومی مراکز کے ساتھ دنیا کے تمام حصوں میں تعاون کرتا ہے ، جس میں پانچ براعظموں میں 90 ادارے شامل ہیں۔

فیڈریشن کا کسی بھی ملک میں اپنا آفیشل نمائندہ اور ایران میں نمائندہ کے طور پر ایک دفتر ہوتا ہے ، جو فوکس فوٹو کلب ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 3 =