ایران میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا راستہ مزید ہموار ہوگیا

کرمانشاہ، ارنا- ایران میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ کی پالیسی کے سلسلے میں ملک کے مغربی صوبے کرمانشاہ میں غیر ملکی سرمایہ کاری کیلئے راستہ مزید ہموار ہوگیا ہے اور اس صوبے کے عہدیدار آئندہ 2 سالوں میں 300 ملین ڈالر زر مبادلہ حاصل کرنے کیلئے پُر امید ہیں۔

تفصیلات کے مطابق، صوبے کرمانشاہ میں حالیہ دوسالوں کے دوران، غیر ملکی سرمایہ کاری کا فروغ ہوگیا ہے اور غیر ملکی سرمایہ کار اس صوبے کی صلاحیتوں کی پہچان کے بعد ان پر سرمایہ کاری کرنے میں دلچسبی رکھتے ہیں اور اب چین، عراق اور روس جیسے ملکوں نے اس صوبے میں سرمایہ کاری کی ہے۔

اس کے علاوہ حالیہ سالوں کے دوران میکسیکو، چین، روس، عراق، لبنان اور کویت کے سرمایہ کاروں نے اس صوبے میں سرمایہ کاری کے مواقع کو چانچنے کیلئے کرمانشاہ کا دورہ کیا ہے۔

صوبے کرمانشاہ کے ڈائریکٹر جنرل برائے اقتصادی امور نے رواں سال کے دوران غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ میں اس صوبے کی کارکردگی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کرمانشاہ میں 202 ملین یورو کی سرمایہ کاری سے تین بڑے منصوبوں کی منظوری دی گئی ہے جن پر جلد عمل درآمد کیا جائے گا۔

"امیر حمزہ حیدریان" نے ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چینی سرمایہ کاروں کا ایک وفد، کرمانشاہ میں "زاگرس ایشیا کا ستون ہے" کے عنوان کے تحت 100 ملین یورو کی سرمایہ کاری سے ایک ٹائیوں اور سیرامیک کی فیکٹری کے قیام کا ارادہ رکھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک جرمن کمپنی بھی 92 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری سے کرمانشاہ میں "سولر پینلز پروڈکشن کی فیکٹری" کے قیام کی خواہاں ہے جو متعلقہ جواز کے حصول کے بعد اس پروجیکٹ سے وابستہ دیگر پروڈکشن یونٹوں کی سرمایہ کاری سے کل سرمایہ کاری میں 350 ملین یورو کا اضافہ ہوگا۔

واضح رہے کہ صوبے کرمانشاہ 25 ہزار کیلومیٹر کے رقبے پر پھیلا ہوا ہے جو ملک کے کل رقبے کا 1.5 فیصد کا حصہ ہے اور گزشتہ سال کے دوران، غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کے شعبے میں تیسری پوزیشن کو اپنے نام کر لیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 0 =