روس سے گیس اور تیل کے شعبوں میں تکنیکی تعاون بڑھانے سے اتفاق کیا گیا ہے: ایرانی وزیر تیل

ماسکو، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر تیل نے کہا ہے کہ انہوں نے روسی حکام سے اپنی ملاقاتوں میں گیس اور تیل کے شعبوں میں تکنیکی تعاون کو بڑھانے سے اتفاق کیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار روس کے دورے پر آئے ہوئے "بیژن نامدار زنگنہ" نے آج بروز پیر کو ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے روسی وزیر اعظم کے خصوصی معان "الکساندر نوواک" و نیز روسی زویر توانائی "نیکلای شولگینوف" سے اپنی ملاقاتوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے تیل کی عالمی مارکیٹ پر بات چیت کی۔

ایرانی وزیر تیل نے اس بات پر زور دیا کہ انہوں نے دورہ ماسکو کے دوران اپنے کیے گئے مذاکرات میں تیل کی عالمی مارکیٹ کی قیمتوں میں استحکام لانے پر گفتگو کی ہے۔

انہوں نے حالیہ سالوں کے دوران تیل کی عالمی مارکیٹ میں استحکام لانے سے متعلق روس کے تعمیری اور اہم کردار پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے روس سے اوپیک اور اوپیک پلاس تنظیموں کے فریم ورک کے اندر سنجیدہ تعاون پر گفتگو کی۔

زنگنہ نے کہا کہ اوپیک پلاس تنظیم کے اجلاس کا 4 جنوری میں انعقاد کیا جائے گا اور فروری میں اس سلسلے میں ایک اجلاس کا انعقاد ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے باہمی تعلقات سے متعلق روسی فریقین سے مذاکرات کیے اور ہمارے اور روسی کمپنیوں کے درمیان اچھے اور تعمیری تعلقات ہیں اور تیل اور گیس کے شعبوں میں ایران اور روسی کمپینوں کے درمیان تعاون کا سلسلہ جاری رہے گا۔

زنگنہ نے کہا کہ روس، ایران کا اسٹریٹجک شراکت دار ہے اور ہمارے تعلقات پر بین الاقوامی تبدیلیوں سے کوئی منفی اثر نہیں پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ اگر روسی کمپنیوں کو ایران میں سرگرم ہونے کا ارادہ ہے تو ان کو ایرانی کمپنیوں سے شریک ہونے اور ان سے مذاکرات کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ روس میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر" کاظم جلالی" اور دیگر نمائندے دونوں ملکوں کے درمیان طے پانے والے معاہدوں کے نفاذ کا تعاقب کر رہے ہیں۔

زنگنہ نے  گیس کی اوپیک تنظیم کے فریم ورک کے اندر تعاون سے متعلق کہا کہ اس حوالے سے سالانہ ایک اجلاس کا انعقاد کیا جاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اوپیک پلاس کے فریم ورک کے اندر فنی معلومات کا تبادلہ کیا جاتا ہے تا ہم اس کا گیس کی عالمی مارکیٹ کی قیمت پر کوئی اثر نہیں پڑے گا؛ گیس اور تیل کی مارکیٹ ایک دوسرے سے مختلف ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha