16 دسمبر، 2020 4:49 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 84150903
0 Persons
ایران کا مختلف قسم منشیات کی ضبطگی پر اقوام متحدہ کو خط

لندن، ارنا- ویانا کی بین الاقوامی تنظیموں میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے اقوام متحدہ کے آفس برائے انسداد منشیات کو ایک خط میں کہا ہے کہ ایران نے 2020 کے ابتدائی 10 مہینوں کے دوران 788 ٹن مختلف قسم کی منشیات کو برآمد کیا گیا ہے۔

"کاظم غریب آبادی" نے اس خط میں کہا گیا ہے کہ سب سے زیادہ ضبط کی گئی منشیات افیون پر مشتمل ہے جن کا وزن 621 ہزار 388 کلوگرام کا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ضبط کی گئی دیگر منشیات بشمول 76 ہزار 625 کلوگرام چرس، 17 ہزار 500 کلوگرام مورفین، 22 ہزار 815 کلوگرام ہیروئین، 13 ہزار 458 کلوگرام گلاس اور 25 ہزار 366 کلوگرام دیگر اقسام ہیں۔

غریب آبادی نے کہا کہ 2020 کے ابتدائی 10 مہینوں کے دوران ایرانی حساس اداروں کے اہلکاروں اور منشیات اسمگلروں سے ایک ہزار914 مسلح جھڑپیں ہوچکی ہیں جن کے نتیجے میں ایک ہزار 886 منشیات اسمگلنگ کے گروہ تباہ ہوگئے ہیں اور ان چھڑپوں میں 9 ایرانی اہلکاروں نے بھی اپنی جانوں کا نذرانہ دے چکے ہیں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، دنیا میں اانسداد منشیات کے صف اول ممالک میں شامل ہے۔

غریب آبادی نے اس حوالے سے بعض ممالک کی عدم ذمہ داری اور غیر تعمیری کارکردگی کی تنقید کی۔

انہوں نے گزشتہ ہفتے کے دوران، اقوام متحدہ کے آفس برائے انسداد منشیات کے کمیشین کے اجلاس میں 1961 کے ڈرگ کنونشن کے ٹیبل 4 سے بھنگ اور اس کے مشتق (بھنگ اور چرس) کو نکالنے کی منظوری کی سختی سے تنقید کی۔

واضح رہے کہ منشیات پکڑنے میں اسلامی جمہوریہ ایران دنیا میں پہلی پوزیشن رکھتا ہے۔

اس شعبے میں ایران نے چار ہزار سے زائد قربانی دی ہے بلکہ منشیات کی لعنت کے خاتمے کے لئے ایران نے جانی اور مالی نقصانات بھی اٹھائے۔

ایران، پاکستان کے ساتھ پڑوسی ہونے اور افغانستان سے یورپ تک منشیات اسمگلنگ کرنے کے راستے میں واقع ہونے کی وجہ سے اس لعنت کی روک تھام کی فرنٹ لائن پر ہے اسی لیے ایران کو منشیات کے خلاف لڑائی میں سب سے زیادہ جانی اور مالی نقصان کا سامنا ہے۔

اب تک ہزاروں ایرانی اہلکار منشیات کے خلاف جنگ میں اپنی جانوں کا نذرانہ دے چکے ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha