ایرانی اور افغان خواتین کا دونوں ممالک کے کثیرالجہتی تعلقات پر تبادلہ خیال

کابل، ارنا – ایرانی پارلیمنٹ، انسانی حقوق کے کمیشن اور سول سوسائٹی کی خواتین نمائندے نے افغان پارلیمنٹ کی خواتین کے ساتھ دونوں ممالک کے درمیان پناہ گزینوں، امن قائم کرنا، خواف ہرات ریلوے لائن اور چابہار بندرگاہ میں باہمی تعاون کے مواقع پر تبادلہ خیال کیا۔

ایرانی اور افغان پارلیمنٹ کی خواتین کے درمیان منگل کے روز ایک ورچوئل نشست کا انعقاد کیا گيا۔
افغان پارلیمنٹ کی نمائندے "ناہید فرید" نے کہا کہ اس آن لائن نشست میں دونوں فریقین نے ایرانی پارلیمنٹ کی خواتین نمائندے اور افغان انسانی حقوق کمیشن کے درمیان مشترکہ عملی امکانات پر تبادلہ خیال کیا۔
کابل میں قائم اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتخانے نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ ایرانی پارلیمنٹ، انسانی حقوق کے کمیشن اور سول سوسائٹی کی خواتین نمائندے نے افغان پارلیمنٹ کی خواتین کے ساتھ دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہتی تعلقات پر بات چیت کی۔
اس نشست میں خواتین کے امور، پناہ گزينوں، امن، خواف ہرات ریلوے لائن، چابہار بندرگاہ، سرمایہ کاری کے مواقع اور سائنسی تعاون پر تبادلہ خیال کیا گيا۔
اسلامی جمہوریہ ایران اور افغانستان نے گزشتہ سال میں نیک نیتی کے ساتھ سیاسی، ثقافتی، اقتصادی اور معاشرتی شعبوں میں دو طرفہ تعلقات کو فروغ دینے کے لئے کوشش کی ہیں۔
نائب ایرانی وزير خارجہ برائے سیاسی امور "سید عباس عراقچی" نے کابل کے دورے کے موقع پر افغان کے حکام کے ساتھ ملاقاتوں کے دوران اس امید کا اظہار کیا کہ دونوں ممالک کے صدور کے ذریعہ جامع اسٹریٹجک دستاویز پر دستخط کرنا تیار ہوگا۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha