عالمی برادری کو داعش کے فکری پھیلاؤ کی بحالی کیخلاف ہوشیار رہنا ہوگا: ایران

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ عالمی برادری کو داعش کے فکری پھیلاؤ کی بحالی کیخلاف ہوشیار رہنا ہوگا۔

یہ بات "سعید خطیب زادہ" نے جمعہ کے روز داعش دہشتگردوں کے خلاف عراقی قوم اور حکومت کی فتح کی تیسری سالگرہ پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے اس فتح کو بڑے پیمانے پر دہشت گردی کے خلاف مذہبی راہنما آیت اللہ سیستانی سے متاثر ، حکومت اور عوام اور تمام عراقی فوجی اور سکیورٹی فورسز کی مضبوط ارادے اور متحدہ جدوجہد کا نتیجہ سمجھا۔
خطیب زادہ نے اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے داعش کی دہشت گردی کو شکست دینے کے لئے عراق کی حمایت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ  اسلامی جمہوریہ ایران کی حکومت اور عوام ہمیشہ عراق کی حکومت اور عوام کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور عراق کے اتحاد ، سلامتی ، استحکام ، ترقی اور خوشحالی کی خاطر کسی بھی طرح کی مدد کرنے سے دریغ نہیں کریں گے۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہم دیکھتے ہیں کہ اس مقدس جدوجہد میں دونوں ممالک کے شہدا کا لہو کس طرح ضم ہوا ہے اور شہید جنرل قاسم سلیمانی اور ابو مہدی المہندس کے قتل میں دونوں حکومتوں کی حمایت اور ہمدردی جب دہشت گردی اور انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے کے رہنما ایک عروج پر پہنچی۔"
 ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ داعش کی فوجی قوت کی شکست کے باوجود تکفیری ، انسانیت اور دہشت گردی کے نظریات اور ان کی علاقائی ، خفیہ اور واضح حمایت جاری ہے اور عالمی برادری کو نظریہ کے پھیلاؤ اور اس کے دوبارہ وجود میں آنے کے خلاف ہوشیار رہنا چاہئے۔
 ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha